اسرائیلی دارالحکومت تل ابیب پر حماس کاراکٹوں سےحملہ

فوٹو: اسکائی نیوز

فلسطین کی مزاحمتی تحریک حماس نے اسرائیل کے دارالحکومت تل ابیب پر راکٹوں سے حملہ کردیا۔

اسرائیلی میڈیا کا کہنا ہے حماس نے اسرائیلی دارالحکومت تل ابیب پر راکٹوں سے حملہ کیا ہے جس کے نتیجے میں 1 شخص ہلاک جبکہ متعدد گاڑیوں کو نقصان پہنچا ہے۔

حماس کی جانب سے راکٹ داغے جانے کے سبب تل ابیب شہر میں سائرن بنادیے گئے۔

دوسری جانب حماس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ انہوں نے تل ابیب اور اس کے نواحی علاقوں کی طرف 130 راکٹ فائر کیے تھے۔

اسرائیلی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ دہشت گرد گروہ حماس کو اس تنازعہ کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔

گزشتہ روز حماس کی جانب سے کیےگئے راکٹ حملوں کے جواب اسرائیلی فوج نےغزہ کی پٹی پر فضائی بمباری کرتے ہوئے 9بچوں سمیت 24افراد کو شہید کردیا تھا۔

اس سےقبل انتہاپسند یہودیوں نے پیر کو مسجد اقصیٰ میں جشن منانے کا اعلان کیا تھا۔ یہ جشن 1967 کی اسرائیل عرب جنگ میں اسرائیل کی فتح اور یروشلم پر اسرائیل کے قبضے کی خوشی میں منایا جانا تھا۔ انتہاپسند یہودی ہیکل سلیمانی میں جشن منانا چاہتے تھے۔

فسلطینی نوجوانوں نے انتہاپسند یہودیوں سے مسجد اقصیٰ کو محفوظ رکھنے کے لئے جمعہ کی شب سے ہی مسجد میں قیام کر لیا تھا۔ انتہاپسند یہودیوں کے اعلان کے بعد 90 ہزار فلسطینی مسجد اقصیٰ کی حفاظت کے لئے یروشلم پہنچ گئے تھے۔