اسلامی نظریاتی کونسل میں خاتون ممبرکی عدم شمولیت کیخلاف درخواست

IHC afp

فوٹو: اے ایف پی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے اسلامی نظریاتی کونسل میں خاتون ممبر کی عدم شمولیت کے خلاف درخواست پر فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 2 ہفتے میں جواب طلب کر لیا۔

منگل 13جولائی کو کیس کی سماعت اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے کی۔ شہری ماہم علی خان کی جانب سے زینب جنجوعہ عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔

وکیل زینب جنجوعہ نے عدالت کو بتایا کہ اسلامی نظریاتی کونسل میں خاتون ممبر کی عدم شمولیت آئین کے آرٹیکل 228 کیخلاف ہے اور اسلامی نظریاتی کونسل نے آئین کے برخلاف خاتون رکن کو شامل نہیں کیا۔ کونسل کے ممبر آٹھ سے کم اور 20 سے زائد نہیں ہو سکتے جبکہ اس وقت کونسل کے 12ممبر ہیں لیکن کوئی خاتون شامل نہیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت حکومت کو اسلامی نظریاتی کونسل میں ایک خاتون ممبر شامل کرنے کی ہدایت کرے۔

عدالت نے سیکریٹری قانون اور چئیرمین اسلامی نظریاتی کونسل کو جواب جمع کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت دو ہفتے کے لیے ملتوی کر دی۔