اسلام آباد:ایف 9 کےویکسینیشن سینٹرمیں شدیدہنگامہ آرائی،سیکورٹی گارڈز زخمی

دیگر شہروں سے آنے والے افراد کے باعث رش اچانک بڑھ گیا

اسلام آباد کے ایف 9 ماس کرونا ویکسینیشن سینٹر میں بیرون ملک جانے والوں کے  احتجاج کے باعث ویکسین لگنے کے عمل کو روک دیا گیا۔

پیر کو ماس ویکسینیشن سینٹر میں بیرون ملک جانے والے افراد کی بڑی تعداد ویکیسن لگوانے پہنچ گئی۔ اس دوران لوگوں کی بڑی تعداد کو اندر جانے سے روکنے کے لیے ایف 9 پارک کا مرکزی داخلی راستہ بند کردیا گیا۔دروازے کا شیشہ ٹوٹنے سے 2 سیکیورٹی اہلکار زخمی ہو گئے اور ویکسینیشن سینٹر میں شدید بدنظمی دیکھنے میں آئی۔وہاں موجود سیکورٹی اہلکاروں اور شہریوں کے درمیان تکرار اور دھکم پیل بھی ہوئی۔

ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر زعیم ضیا نے بتایا کہ ویکیسینیشن سنٹر میں آسٹرا زینیکا اور فائزر لگائی جا رہی ہے اور بیرون ملک جانے والوں کو ویکیسن لگانے کا عمل جاری تھا تاہم اس دوران دیگر شہروں سے آنے والے افراد کے باعث رش اچانک بڑھ گیا۔ایس او پیز کے تحت سب کو ایک ساتھ اندر نہیں آنے دیا جا سکتا اس لیے مرکزی دروازے کو بند کیا گیا لیکن ویکیسن لگوانے والے مرکزی دروازہ توڑ کر اندر داخل ہوگئے۔

اس سے قبل بھی ایف 9 ماس ویکسینیشن سینٹر پر بدنظمی کے واقعات پیش آچکے ہیں تاہم پولیس نے صورتحال کو کنٹرول کرکے ویکسین کا عمل بحال کروایا تھا۔

کرونا ويکسين لگوانے والوں کيلئے این سی اوسی نے پاليسی تبدیل کردی ہے۔ سائنو ویک اورسائنوفارم کی دوسری ڈوز کا ٹائم 4 ہفتے سے بڑھا کر6 ہفتے کردیا گيا ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ دوسری ڈوز کا وقت بڑھنے سے کوئی مشکل درپیش نہیں ہوگی۔

متعلقہ خبریں