اسلام آباد:ایف9ویکسینیشن مرکزکے باہر بیرون ملک جانے والوں کا احتجاج

ویکسین دستیاب نہیں

اسلام آباد کے ایف 9 ماس ویکسینیشن مرکز کے باہر بیرون ملک جانے والے پاکستانیوں نے احتجاج کیا۔

منگل کی صبح  ویکسینیشن مرکز کے باہر بیرون ملک جانے والے مظاہرین کی قطاریں لگ گئیں۔ ان کا موقف تھا کہ ویزے ختم ہونے والے ہیں لیکن ویکسین لگوائے بغیر نوکریوں پر واپس کیسے جائیں گے۔ مظاہرین نے بتایا کہ ویکسین سرٹیفیکیٹ کے بغیر بیرون ملک نہیں جاسکتے لیکن اس وقت وہ ویکسین ہی نہیں لگ رہی جس کو دیگر ممالک نے منظور کیا ہے۔مظاہرین کی جانب سے سڑک بلاک کرکے دھرنا دے دیا گیا۔

کرونا ويکسين لگوانے والوں کيلئے این سی اوسی نے اچانک پاليسی تبدیل کردی ہے۔سائنو ویک اورسائنوفارم کی دوسری ڈوز کا ٹائم 4 ہفتے سے بڑھا کر6 ہفتے کردیا گيا ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ دوسری ڈوز کا وقت بڑھنے سے کوئی مشکل درپیش نہیں ہوگی۔

اتوار کو پی آئی اے کی خصوصی پرواز 15 لاکھ 50ہزار ویکسین لے کر پاکستان پہنچی ہے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق پی آئی اے 22جون کو مزید 20لاکھ کرونا ویکسین پاکستان لے کر لائے گا۔

این سی او سی کا کہنا تھا کہ پاکستان کو چین ویکسین کی بلاتعطل فراہمی کے لیے خصوصی اقدامات کررہا ہے اور اس سلسلے میں پی آئی اے اس ریلیف آپریشن کی لیے بوئنگ 777طیارے استعمال کررہا ہے۔

متعلقہ خبریں