اسپتالوں میں کروناسےمتاثرہ مریضوں کی تعدادمیں اضافہ ہورہاہے،اسدعمر

 

این سی او سی کے سربراہ اور وفاقی وزیر اسد عمر نے خبردار کیا ہے کہ اسپتالوں میں کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھنا شروع ہوگئی ہے۔

جمعرات کواسد عمر نے ٹویٹ کرتےہوئے بتایا کہ ملک کے اسپتالوں میں  مریضوں کی تعداد میں تشویش ناک حد تک اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ڈیلٹا ویرینٹ خطے کی تباہی کا باعث بن رہا ہے۔

انھوں نے عوام سے اپیل کی کہ وائرس سے بچاؤ کے لیے ایس او پیز پرعمل کریں اور ویکسین لگوائیں تاکہ اپنی اور دوسروں کی جان خطرے میں نہ پڑے۔

معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے خبردار کیا ہے کہ پاکستان میں کرونا کیسز میں اضافہ ہورہا ہے۔

معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے ٹویٹ کرتےہوئے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 2 ہزار 545 کیسز رپورٹ ہوئے۔کرونا کےمثبت کیسز کی شرح 5.2 فیصد ریکارڈ کی گئی جبکہ کراچی میں 19 فیصد مثبت کیسز کی شرح رہی۔ پشاور میں 9.4 فیصد، اسلام آباد میں 6.2 فیصد اورلاہورمیں3.8 فیصد شرح رہی۔

ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ شہری ماسک کا استعمال لازمی کریں اورہجوم والی جگہوں پر جانے سے پرہیز کریں۔ اس کے علاوہ گزشتہ روز 5 لاکھ 80 ہزار کرونا ویکسین کی خوراکیں لگائی گئی ہیں۔

جمعرات کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے بتایا ہے کہ 1 دن میں 47 افراد کرونا وائرس کے باعث  انتقال کرگئے۔ ان میں سے 27 مریضوں کا انتقال وینٹیلیٹر پر ہوا ہے۔

این سی او سی نے مزید بتایا کہ 24  گھنٹوں میں 2 ہزار 545 نئے کرونا کیسز رپورٹ ہوئے اور ملک میں کرونا کے مثبت کیسز کی شرح 5.2 فیصد ہوگئی ہے۔کرونا کے باعث سب سے زیادہ  سندھ میں 26 اموات، پنجاب میں 13 اموات رپورٹ ہوئیں۔ خیبرپختونخوا میں 6 اموات، اسلام آباد اور آزاد کشمیر میں 1، 1 مریض کا انتقال ہوا۔ ملک میں کرونا سے مجموعی اموات کی تعداد 22 ہزار 689 ہوگئی ہے۔

این سی او سی نےمزید بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کےدوران 48 ہزار 910 ٹیسٹ کئے گئے۔ملک میں کرونا کےفعال کیسزکی تعداد42 ہزار330 ہوگئی ہے۔کرونا وائرس سے صحت یاب ہونےوالوں کی تعداد 9 لاکھ 16 ہزار 373 ہے۔ ملک بھر میں کرونا وائرس کےمجموعی کیسزکی تعداد 9 لاکھ 81 ہزار 392 ہوگئی ہے۔

اس وقت 2 ہزار 619 مریض 639 اسپتالوں میں زیرعلاج ہیں۔اسلام آباد میں 24 فیصد، ملتان میں 15 فیصد، پشاور میں 13 فیصد، لاہور میں 18 فیصد وینٹیلیٹرز بھرچکے ہیں۔ اسکردو میں 42 فیصد، مظفرآباد میں 30 فیصد، کراچی میں 38 فیصد اور گلگت میں 56 فیصد آکسیجن بیڈز پر مریض موجود ہیں۔

محکمہ صحت بلوچستان نے بتایا ہے کہ صوبے میں کرونا کیسز بڑھنے کی شرح 11 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ صوبے میں کرونا کے مزید 126 کیسز سامنے آگئے ہیں جس کے بعد مثبت کیسز کی تعداد 28 ہزار 120 تک پہنچ گئی ہے۔اس وائرس سے اب تک 317 افراد جاں بحق جبکہ26 ہزار 877 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

متعلقہ خبریں