امریکا اور کینیڈا میں بدترین گرمی،معمولاتِ زندگی متاثر،درجنوں اموات

موسمی تبدیلی کےباعث گرمی میں مزید اضافہ متوقع

امريکا اور کينيڈا ميں گرمی کا ريکارڈ ٹوٹ گيا ہے۔ کينيڈا کا صوبہ  برٹش کولمبيا  گرمی کےباعث شديد متاثر ہوا ہے اوراب تک تقریبا 500 افراد انتقال کرچکے ہیں۔

موسمياتی تبديليوں کےاثرات نے کینیڈا کو شدید متاثر کیا ہے۔کینیڈا میں گرمی کا 126 سال کا ريکارڈ ٹوٹ گيا ہے۔ برٹش کولمبيا ميں درجہ حرارت 49 اعشاريہ 6 ڈگری تک پہنچنے کے باعث درجنوں افراد جان سے چلے گئے۔حبس اور گھٹن کے باعث انتقال کرنے والوں ميں زيادہ تر بوڑھے اور بيمار  افراد شامل ہيں۔ شہر میں معمولات زندگی بری طرح متاثر ہوئے ہیں۔لوگ گرمی سے بچنے کيلئے نہروں کا رُخ کر رہے ہيں جبکہ سڑکوں اور عوامی مقامات پر سناٹا ہے۔

کینیڈا کے وزيراعظم جسٹن ٹروڈو کا کہنا ہے کہ وقت آگيا ہے کہ دنيا موسمياتی تبديليوں کے حوالے سے سخت اقدامات اُٹھائے۔

ادھر امریکا میں پورٹ لینڈ اور سیئیٹل میں بھی ریکارڈ درجہ حرارت ديکھا جا رہا ہے۔ پورٹ لینڈ میں درجہ حرارت 46 ڈگری اور سيئٹل ميں 42 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔ امریکی محکمہ موسمیات کے مطابق موسمی تبدیلی کےباعث گرمی میں مزید اضافہ متوقع ہے۔

متعلقہ خبریں