انسدادتجاوزات مہم، کڈنی ہل پارک کی ڈیڑھ ایکڑ زمین واگزار

کے ایم سی انسداد تجاوزات ٹیم نے رنگون والا ہال کے قریب دھوراجی کالونی میں کڈنی ہل پارک کی زمین پر غیرقانونی تعمیرات گرادیں۔

کے ایم سی محکمہ انسداد تجاوزات کے سینئر ڈائریکٹر بشیر صدیقی آپریشن کے سربراہ تھے، ضلع وسطی انتظامیہ، پولیس اور سٹی وارڈن بھی آپریشن کے موقع پر موجود تھے۔

کے ایم سی کے محکمہ انسداد تجاوزات نے آپریشن کے دوران کڈنی ہل پارک کے اندر اور اطراف سے تجاوزات کا خاتمہ کیا۔

بشیر صدیقی کا اس موقع پر کہنا تھا کہ انسداد تجاوزات ٹیم نے کڈنی ہل پارک کی ڈیڑھ ایکڑ زمین پر قائم پختہ اور غیر پختہ تعمیرات گرادیں، زبیدہ جنرل اسپتال کی پارکنگ بھی گرادی گئی جو پارک کے بعد اس کی زمین پر قائم کی گئی تھی۔

سینئر ڈائریکٹر کے ایم سی محکمہ انسداد تجاوزات نے مزید کہا کہ زبیدہ جنرل اسپتال کے سیکیورٹی گارڈز کیلئے قائم کمرے بھی گرادیے گئے جو پارک کی زمین پر تعمیر کئے گئے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ انسداد تجاوزات آپریشن سپریم کورٹ کی ہدایت کے مطابق جاری ہے اور قبضہ کی گئی تمام زمینوں کے واگزار کرانے تک جاری رہے گا۔

کڈنی ہل پارک 62 ایکڑ زمین پر قائم ہے اور 2006ء کے بعد سے اس کی 20 ایکڑ زمین پر قبضہ کیا گیا، اس زمین پر کوکن کو آپریٹو ہاؤسنگ سوسائٹی کے تحت رہائشی یونٹس اور ڈیری فارمز قائم کئے گئے۔

کوآپریٹو سوسائٹی نے پہلی بار 2018ء میں سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کیا اور حکم امتناع حاصل کرلیا تاہم 2019ء میں سپریم کورٹ نے حکم امتناع معطل کرتے ہوئے کے ایم سی حکام کو کڈنی ہل پارک کی زمین پر قائم تجاوزات کے خاتمے کا حکم دیا، ساتھ ہی اس پر رپورٹ پیش کرنے کی بھی ہدایت کی۔

کے ایم سی کے محکمہ انسداد تجاوزات کی جانب سے 2019ء اور 2020ء میں رہائشی یونٹس اور ڈیری فارمز مسمار کرکے پارک کی 7.5 ایکڑ زمین بازیاب کرائی جاچکی ہے۔

سابق میئر کراچی اور کمشنر کے ایم سی ڈاکٹر سیف الرحمان نے اس معاملے پر خصوصہ توجہ دے کر پارک کی تزین کے اقدامات کا آغاز کیا اور پارک کی زمین پر مختلف اقسام کے 3 ہزار سے زائد پودے لگائے جبکہ قریبی رہائشیوں کیلئے جاگنگ ٹریک بھی بنایا۔

کے ایم سی سینئر ڈائریکٹر نے مزید کہا کہ محکمہ انسداد تجاوزات مہم کے دوران اب تک 9 ایکڑ زمین بازیاب کراچکا ہے جبکہ پارک کی 11 ایکڑ زمین خالی کرانے تک آپریشن جاری رکھا جائے گا۔

کے ایم سی انتظامیہ کی جانب سے قابضین کو کڈنی ہل پارک کی زمین خالی کرنے کے نوٹس بھیجے جاچکے ہیں، گزشتہ تین سال میں محکمے نے قابضین کو 3 بار نوٹس بھیجے تاہم اب بھی زمین خالی کرانے کیئے انسداد تجاوزات مہم چلانے سے قاصر ہے۔

کے ایم سی ریکارڈ کے مطابق محکمہ انسداد تجاوزات نے قابضین کو آخری نوٹس عید الفطر سے قبل دیا تھا تاہم عید تعطیلات کے باعث نوٹس واپس لے لیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں