انڈیا کا ’رابن ہڈ‘ جو چوری کی رقم غریبوں میں بانٹتا ہے ’چوری کر کے اچھا لگا‘

ملزم نے دعویٰ کیا کہ اس نے چوری کی تمام رقم غریبوں میں بانٹ دی۔ فوٹو: ہندوستان ٹائمز

انڈیا میں سوشل میڈیا ٹائم لائنز پر چور اور پولیس اہلکار کے درمیان گفتگو کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی جس میں چور اپنی چوری کا اعتراف کر رہا ہے اور ساتھ ہی یہ بھی بتا رہا ہے کہ اس نے یہ پیسے کہاں لگائے۔
ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ چور نے ڈرگ سپرنٹنڈنٹ پولیس کے سامنے اعتراف جرم کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ اس نے چوری کی تمام رقم آوارہ جانوروں کو کھانا کھلانے اور غریبوں میں کمبل بانٹنے پر لگا دی۔
ہندوستان ٹائمز کے مطابق انڈیا کی ریاست چھتیس گڑھ میں پیش آنے والے اس واقعے پر چور کا کہنا ہے کہ اسے دس ہزار انڈین روپے چرانے کے بعد غلطی کا احساس ہوا۔
مزید پڑھیں
ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ڈرگ سپرنٹنڈنٹ پولیس ڈاکٹر ابھشیک پلاوا چور سے تفتیش کر رہے ہیں جبکہ وہاں موجود دیگر پولیس اہلکار چور کے جوابوں پر ہنس رہے ہیں۔
ویڈیو سب سے پہلے بھلائی ٹائمز کے سوشل میڈیا اکاؤنٹٹس پر شیئر ہوئی تھی جو کئی مرتبہ دیکھی اور دوبارہ شیئر کی گئی۔
سوشل میڈیا صارفین ویڈیو پر تبصرہ کرتے ہوئے چور کو ’رابن ہڈ‘ یا ’کرانتی کاری چور‘ یعنی انقلابی چور کے ناموں سے پکار رہے ہیں۔
ویڈیو میں چور کو یہ بھی کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ ’چوری کر کے اچھا لگا لیکن بعد میں پچتاوا۔‘
پولیس افسر نے پچتاوے کی وجہ پوچھی تو ملزم نے کہا کہ بعد میں احساس ہوا کہ غلط کام کر دیا ہے۔
پولیس اہلکار نے ملزم سے پوچھا کہ اس نے کتنے پیسے چرائے جس پر اس شخص نے بتایا کہ 10 ہزار روپے چرائے جو غریبوں میں بانٹ دیے۔
ملزم کا کہنا تھا کہ چوری کے پیسے سے سردی کے موسم میں سڑکوں پر پڑے غریبوں میں کمبل بانٹے۔