انڈین روپیہ ڈالر کے مقابلے میں تاریخی گراوٹ کا شکار

جمعے کو آر بی آئی کی مداخلت کی وجہ سے روپے کی قدر میں کچھ بہتری دیکھنے میں آئی تھی۔ (فوٹو: روئٹرز)

انڈین روپے کی ڈالر کے مقابلے میں قدر میں تاریخی کمی آئی ہے۔
روپے کی قدر میں مزید گراوٹ کے خدشے اور پاؤنڈ کے نیچے جانے سے ڈالر سنہ 2002 کے بعد بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے۔
برطانوی خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق پیر کو ڈالر تقریباً 81.30 انڈین روپے تک پہنچ گیا جبکہ اس سے قبل یہ 80.9900 انڈین روپے پر تھا۔
مزید پڑھیں
ٹریڈرز کے مطابق جمعے کو ایک ڈالر کے مقابلے میں انڈین روپیہ 81.2250 کی ریکارڈ کم ترین سطح پر پہنچ گیا تھا، جس کی وجہ سے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) ڈالر فروخت کرنے پر مجبور ہو گیا تھا۔ آر بی آئی کی مداخلت کی وجہ سے روپے کی قدر میں کچھ بہتری دیکھنے میں آئی تھی۔
ممبئی میں قائم بینک کے ایک ٹریڈر نے آر بی آئی کی سرکاری بینکوں کے ذریعے مداخلت کا شارہ دیتے ہوئے کہا کہ ’یہ ایک سخت اور اتار چڑھاؤ والا سیشن ہو گا۔ سبھی کی نظریں مارکیٹ کھلتے ہی عام سرکاری بینکوں پر ہوں گی۔‘
انہوں نے کہا کہ ’81.20 پر آر بی آئی کی مداخلت کافی زبردست تھی اور مارکیٹیں یہ جاننا چاہیں گی کہ آیا اس سطح کو دوبارہ محفوظ کیا جائے گا۔ لیکن ایشیائی کرنسیوں کی لڑکھڑاہٹ کے پیش نظر آر بی آئی مداخلت کرنے کے لیے زیادہ مائل نہیں ہو سکتا۔‘
واضح رہے کہ گرتے ہوئے برطانوی پاؤنڈ کی بدولت ایشیا ٹریڈنگ میں ڈالر انڈیکس 114.50 سے اوپر پہنچ گیا ہے، جو مئی 2002 کے بعد سب سے زیادہ ہے۔
برطانیہ میں نئی حکومت کے معاشی پلان کے خوف سے پاؤنڈ کی قدر میں تاریخی کمی ہوئی ہے۔