ايل ڈی اے پرائيويٹ ہاؤسنگ ايکٹ کے رولز ميں تبديلی

جون2020 ميں پنجاب حکومت نے تراميم کيں

ايل ڈی اے ہاؤسنگ ايکٹ ميں ترميم سے سوسائٹی مالکان کو فائدہ پہنچانے کا معاملہ سامنے آگيا جس میں سوسائٹيز ميں اپارٹمنٹس، پارکس اور قبرستان کی لازمی شق ميں ترميم جبکہ کمرشل ايريا کو ڈبل کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔

سرکاری دستاويزات کے مطابق جون 2020 ميں پنجاب حکومت نے ايکٹ ميں ترميم کی جس کے تحت ہر سوسائٹی ميں 20فيصد رقبہ اپارٹمنٹس اور 3سے 5مرلے کے پلاٹس کے ليے لازمی رکھنے کی شق ميں ترميم کرکے لفظ “يا” کا اضافہ کر ديا گيا جس کی وجہ سے اب سوسائی مالکان کو اختيار ہوگا کہ وہ چاہيں تو اپارٹمنٹس بنائيں يا پھر پانچ مرلے کے پلاٹس بنا کر فروخت کر ديں۔

قبرستان کے ليے مختص 2فيصد رقبہ لازمی ہونے کی شق ميں بھی ترميم کر دی گئی جس سے اب سوسائٹی سے باہر قريبی قبرستان ہونے سے بھی کام چلايا جا سکے گا۔

تحریک انصاف کے رہنما محمود الرشید کہتے ہیں کہ سوسائٹیز میں اپارٹمنٹس بنانے کا رجحان نہیں، اس لیے متعلقہ شقوں میں ترامیم کیں۔

دستاویزات کے مطابق پارکس کے ليے مختص 7فيصد رقبے ميں گالف کورس کو بھی شامل کر ليا گيا جبکہ کمرشل ايريا کو بھی 5فيصد سے بڑھا کر 10فيصد کرنے سے سوسائٹی مالکان کو فائدہ پہنچایا گیا۔

متعلقہ خبریں