ایس بی سی اے کوغیرقانونی تعمیرات کیخلاف آپریشن تیزکرنیکی ہدایت

فوٹو: آن لائن

وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کو غیر قانونی تعمیرات کیخلاف آپریشن تیز کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بڑے پیمانے پر مہم کی منصوبہ بندی کی جائے، سندھ حکومت بھرپور معاونت کرے گی۔

وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ کی زیر صدارت سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کا اہم اجلاس ہوا، جس میں ڈائریکٹر جنرل ایس بی سی اے سلیم رضا کھڑو اور سینئر ڈائریکٹرز سمیت دیگر افسران نے شرکت کی۔

سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ غیرقانونی تعمیرات کی وجہ سے پورا محکمہ بدنام ہے، غیر قانونی تعمیرات کیخلاف کارروائیاں تیز کی جائیں۔ انہوں نے ماس کیمپین کی منصوبہ بندی کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت مہم میں بھرپور معاونت فراہم کرے گی۔

وزیر بلدیات کا کہنا تھا کہ مہم میں پولیس، رینجرز اور ضلعی انتظامیہ سے مدد لی جائے، ضلعی سطح پر کمیٹیاں بنی ہوئی ہیں، ان کو فعال کیا جائے، ایس بی سی ایس کو افرادی قوت اور ضروری ایکوپمینٹ فراہم کیا جائے گا۔

ناصر حسین شاہ نے مزید کہا کہ غیرقانونی تعمیرات کی  رپورٹ کرنا متعلقہ افسر کی ذمّہ داری ہے، اگر رپورٹ نہیں کی گئی تو سمجھا جائے گا افسر غیر قانونی تعمیرات میں ملوث ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ سندھ حکومت اور پاکستان پیپلز پارٹی کی طرف سے غیرقانونی تعمیرات کی کوئی سرپرستی نہیں، قانون سے کوئی بالاتر نہیں، جو بھی غیرقانونی تعمیرات میں ملوث ہے ان کیخلاف مقدمات درج کروائے جائیں۔

وزیر بلدیات کا کہنا ہے کہ غیر قانونی پورشن بن جاتے ہیں، چھوٹے چھوٹے پلاٹوں پر 8، 8 منزلہ عمارتیں کھڑی کر دی جاتی ہیں، آئے دن بلڈنگ گر رہی ہیں، جس سے جانی و مالی نقصان ہوتا ہے۔

انہوں  نے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے قوانین کو بہتر کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلوں پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے۔

متعلقہ خبریں