باپ، بھائیوں کےمعاف کرنےپرماں کی قاتلہ کی ضمانت منظور

لاہورمیں ماں کو قتل کرنے کی ملزمہ قوت گويائی سے محروم لڑکی کی والد اور بھائیوں کی جانب سے معاف کردینے پر ضمانت کی درخواست منظور ہوگئی۔

سیشن کورٹ لاہور نے ملزمہ فجر انعام کی ضمانت ایک لاکھ روپے مچلکوں کے عوض درخواست ضمانت منظور کی۔

ملزمہ کو بھائيوں اور والد  نے اللہ کی رضا کی خاطر معاف کيا جن کے بیان کی روشنی میں ایڈیشنل سیشن جج سید شہزاد مظفر نے ضمانت منظور کرلی۔

فجر انعام کے خلاف تھانہ گلشن راوی پولیس میں قتل کا مقدمہ درج ہوا تھا۔ ملزمہ پر اپنی سگی ماں کو قتل کرنے کا الزام ہے۔

یاد رہے کہ لاہور پولیس نے اقبال ٹاؤن میں 48 سالہ بسمہ اللہ کے 22 اگست 2020  کو ہوئے قتل کا معمہ سلجھاتے ہوئے ان کی 20 سالہ بیٹی فجر انعام کو اس کے دوست عظیم سمیت گرفتار کیا تھا۔ دونوں ملزمان کلاس فیلو اور قوت گویائی سے محروم ہیں۔ واردات کے بعد فجر موقع سے تو غائب تھی لیکن سی سی ٹی وی فوٹیج میں وہ اپنے دوست کے ہمراہ فرار ہوتی دکھائی دی تھی۔

بعد ازاں ملزمہ نے اشاروں میں بات کرتے ہوئے پولیس کے سامنے قتل کا اعتراف کیا۔ پولیس کے مطابق دونوں نے واٹس ایپ پر ویڈیو کال کرکے ملاقات کا منصوبہ بنایا تھا لیکن ملاقات کے دوران لڑکی کی والدہ نے مداخلت کی جس پر بیٹی نے دوست کی مدد سے ماں کو موت کے گھاٹ اتاردیا۔ ملزم عظیم نے بھی اشاروں کی مدد سے قتل میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا تھا۔