بلاول پر زرداری کی سوچ غالب ہے، بھٹو کی سوچ دفن ہوگئی،شاہ محمود

بلاول بھٹو نے روایات سے ہٹ کر موضوعات پر بات کی

شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بلاول پر آصف زرداری کی سوچ غالب ہے اور ذوالفقار علی بھٹو کی سوچ دفن ہوگئی ہے۔

جمعرات کو سماء کے پروگرام نیا دن میں بات کرتےہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بلاول بھٹو نے ایوان میں پارلیمانی روایات کی بات کی۔روایت یہ ہے کہ بجٹ پیش کرنے کے بعد اپوزیشن لیڈر بحث کا آغاز کرتے ہیں اور وزیرخزانہ اختتامی کلمات ادا کرتے ہیں تاہم سندھ اسمبلی میں ایسا نہیں ہوا۔ بلاول بھٹو نے روایات سے ہٹ کر موضوعات پر بات کی اور ان کو جب آئینہ دکھایا تو اُن کو اپنا جو چہرا نظر آیا وہ اُن کو پسند نہیں آیا۔

شاہ محمود نے کہا کہ بلاول کو اس دور میں دیکھا ہے جب وہ کھیلا کرتے تھے اور بےنظیر بھٹو کے سامنے جھڑکیاں کھاتے دیکھا ہے۔ انھیں پیپلزپارٹی کا سربراہ نامزد کردیا گیا اوران کو وراثت میں پارٹی مل گئی۔پاکستان کے عوام کو بھٹو کی پیپلزپارٹی اور زرداری کی پیپلزپارٹی میں واضح فرق دکھائی دےرہا ہے۔

شاہ محمود نے کہا کہ بلاول بھٹو نہیں بلکہ بلاول زرداری ہے۔ بلاول کی سوچ بھٹو کی سوچ نہیں ہے اور بلاول زرداری کا بیٹا ہے۔ آج کی پیپلزپارٹی آصف زرداری چلارہے ہیں اور بلاول صرف شو بوائے ہیں۔

بدھ کو قومی اسمبلی اجلاس میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی اور چئیرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے ایک دوسرے پر سخت الزامات عائد کئے تھے اور کڑی تنقید کی تھی۔

بلاول بھٹو نے کہا تھا کہ مجھے فاضل ممبران کے سوالوں کا جواب دینے دیں۔جتنا  پاکستان پیپلزپارٹی فاضل ممبر ملتان کو جانتی ہے اتنا کوئی نہیں جانتا۔ عمران خان کو پتہ چل جائے گا کہ فاضل ممبر ملتان کیا چیز ہے۔عمران خان صاحب کو چاہئے کہ  شاہ محمود قریشی کو پہچانے کیوں کہ اس فاضل ممبر کو بچپن سے جانتا ہوں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ فاضل ممبر نے اس پارٹی کی بات کی جس نے ان کو وزیر خزانہ بنایا تھا اور اس ممبر کو جئے بھٹو کے نعرہ لگاتے دیکھا ہے۔ اس کے علاوہ اس ممبر کو اگلی باری پھرزرداری کا نعرہ لگاتے ہوئے بھی دیکھا ہے۔چئیرمین پیپلزپارٹی نے یہ بھی کہا کہ وزیر خارجہ کشمیر کے سودے میں ملوث ہے۔

متعلقہ خبریں