بلوچستان میگا کرپشن کیس: مشتاق رئیسانی کو 10سال قیدکی سزا

خالد لانگو کو 2سال اور 2ماہ قید کی سزا

کوئٹہ کی احتساب عدالت نے بلوچستان میگا کرپشن کیس میں سابق سیکریٹری خزانہ مشتاق رئیسانی کو 10سال جبکہ سابق مشیر خزانہ میر خالد لانگو کو 2سال اور 2ماہ قید کی سزا سنا دی۔

احتساب عدالت ون کے جج منور شاہوانی نے بلوچستان میگا کرپشن کیس کا محفوظ فیصلہ سنایا۔

عدالت نے سابق سیکریٹری خزانہ مشتاق رئیسانی کو 10 سال قید کی سزا اور تمام جائیدادیں بنام سرکار ضبط کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے یہ فیصلہ سنایا کہ میر خالد لانگو کی سزا ان کے ٹرائل کے دوران گرفتاری کے وقت سے شروع ہوگی جبکہ کیس میں نامزد سابق سیکریٹری بلدیات حافظ عبدالباسط اور سابق سیکریٹری لوکل کونسل کو میگا کرپشن کیس سے باعزت بری کرنے کا حکم دیا۔

سابق سیکریٹری خزانہ مشتاق رئیسانی کو میگا کرپشن کیس میں 6مئی 2016 کو گرفتار کیا گیا تھا، ان کے گھر سے 64 کروڑ روپے سے زائد کی نقدی اور زیورات برآمد ہوئے تھے۔

کیس کے مرکزی قردار سابق سیکریٹری خزانہ مشتاق رئیسانی نے ملی بھگت سے 2ارب 24کروڑ روپے کی کرپشن کی تھی۔ میگا کرپشن کیس میں نامزد ٹھیکیدار سہیل مجید شاہ کو پلی بارگین کے بعد رہا کر دیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں