بوڑھی ماں بیٹوں سےخرچہ لینےکیلئےعدالت جانےپرمجبور

خاتون کی ماہانہ خرچہ دلوانے کیلئےعدالت سےاپیل

Your browser does not support the video tag.

جن بچوں کو پڑھا لکھا کر افسر بنايا ان ہی چار بیٹوں نے بڑھاپے ميں ماں کو گھر سے نکال ديا جس پر بزرگ خاتون نے روزمرہ کے خرچے کے حصول کے لیے عدالت سے مدد طلب کرلی۔

لاہور میں 70 سالہ خاتون رفعت النساء اپنی دکھ بھری کہانی لے کر عدالت پہنچ گئیں اور بتایا کہ انہوں نے بتایا کہ ان کے شوہر کا انتقال ہوچکا ہے اور ان کی کوئی بیٹی بھی نہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ انہوں نے اپنے 4 بیٹوں کو پڑھا لکھا کر افسر بنایا لیکن ان لوگوں نے انہیں گھر سے نکال دیا ہے۔خاتون نے عدالت سے استدعا کی کہ وہ اس عمر میں کمانے کے لائق نہیں اور نہ ہی ان کا کوئی اور سہارہ ہے لہٰذا ان کے بیٹوں کو پابند کیا جائے کہ وہ انہیں خرچہ دیں۔عدالت نے حکم جاری کیا کہ خاتون کا ہر بیٹا انہیں ماہانہ ہر 15 ہزار روپے خرچہ فراہم کرے۔ عدالت نے اس سلسلے میں خاتون کے چاروں بیٹوں کو 14 جولائی کو طلب بھی کرلیا۔

متعلقہ خبریں