بھارت: مریضوں کومفت اسپتال لےجانے کیلئے رکشہ ایمبولینس میں تبدیل

India

فوٹو: اے این آئی

کرونا کی تیسری لہر کے کیسز میں اضافے پر بھارتی شہر بھوپال میں مریضوں کو مفت اسپتال لے کر جانے کے لیے ایک رکشہ ڈرائیور نے اپنے رکشہ کو ایمبولینس میں تبدیل کر دیا۔

بھارتی ذرائع ابلاغ اے این آئی سے گفتگو میں رکشہ ڈرائیور جاوید خان کا کہنا تھا کہ نیوز چینلز اور سوشل میڈیا پر دیکھ رہا تھا کہ ایمبولینسز کی قلت کی وجہ سے بری طرح سے مریضوں کو اسپتال لے کر جایا جا رہا تھا اور اس لیے میں نے ایسا کرنے کا سوچا۔

جاوید خان نے مزید بتایا کہ رکشہ کو ایمبولینس بنانے کے لیے میں نے اپنی اہلیہ کی جیولری فروخت کی اور ایک ریفل سینٹر کے باہر قطار میں کھڑا ہو کر سلنڈر میں آکسیجن بھرواتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر میرا فون نمبر دستیاب ہے اور ایمبولینس کی عدم دستیابی پر شہری میرے نمبر پر کال کر سکتے ہیں۔

رکشہ ڈرائیور جاوید خان کا کہنا تھا کہ یہ کام میں پچھلے 15 سے 20 دنوں سے کر رہا ہوں اور اب تک سنجیدہ حالت کے 9 مریضوں کو اسپتال لے جا چکا ہوں۔

بھارت: کروناوائرس سےایک دن میں ریکارڈ ہلاکتیں

واضح رہے کہ بھارت میں 29 اپریل کو کرونا سے ریکارڈ 3ہزار 645 افراد ہلاک ہوگئے جبکہ وزارت صحت کے مطابق 3لاکھ 80سے زائد کیسز بھی رپورٹ ہوئے۔

بھارت میں کرونا متاثرین کی مجموعی تعداد اب تقریباﹰ ایک کروڑ 84لاکھ افراد کرونا کی عالمی وبا کا شکار ہوچکے ہیں۔

متعلقہ خبریں