بھارت: کروناکےبعد ‘بلیک فنگس‘بیماری کاحملہ

فوٹو: انڈیا ٹوڈے

بھارت میں کرونا وائرس کے بعد’بلیک فنگس‘ نامی بیماری نے لوگوں کی بینائی کو متاثر شروع کردیا۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق ‘بلیک فنگس‘ نامی بیماری یعنی میوکر مائیکوسس تیزی سے پھیل رہی ہے، جو کرونا سے متاثر ہونے کے بعد صحت یاب ہوچکے ہیں۔ اس بیماری کی وجہ سے لوگوں کی بینائی ختم ہوتی جارہی ہے اور دیگر سنگین طبی پیچیدگیاں بھی پیدا ہو رہی ہیں، جس کے سبب ان کی موت ہو جاتی ہے۔

بھارتی ریاست گجرات، مہاراشٹر، بنگلور، حیدرآباد، پونے اور دہلی میں بلیک فنگس کے سینکڑوں متاثرین کا علاج چل رہا ہے اور ان میں متعدد افراد کی جان بچانے کےلیے ان کی آنکھ نکال دی گئی جبکہ بعض لوگوں کے جبڑے نکالنے پڑے ہیں۔

بلیک فنگس کا طبی نام میوکر مائیکوسس ہے۔ یہ کوئی متعدی بیماری نہیں بلکہ یہ ان افراد میں زیادہ تیزی سے پھیلتی ہے جن کی قوت مدافعت کمزور ہو۔ اگر ابتدائی دور میں ہی اینٹی فنگل تھیریپی شروع کردی جائے تو مریض کی جان بچ سکتی ہے۔

دہلی کے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے سابق ڈائریکٹر ڈاکٹر ایم سی شرما کے مطابق کرونا کےعلاج کرانے کے بعد صحتیاب ہوجانے والے مریضوں پر بلیک فنگس کاحملہ اس لیے زیادہ ہورہا ہے کیونکہ کرونا کے مریضوں کو آئی سی یو میں طویل عرصے تک علاج کے دوران دوائیں دی جاتی ہیں جس سے ان کی قوت مدافعت کمزور ہوجاتی ہے۔ جب فنگس ان پر حملہ آور ہوتا ہے تو اسے روکنا بہت مشکل ہوتا ہے اور اکثر کوئی دوا کارگر ثابت نہیں ہوتی ہے۔