بیرون ملک سےآنیوالے مسافروں کا ایئرپورٹس پر ریپڈ ٹیسٹ کاآغاز

رپورٹ مثبت آنےپر مسافر کواپنے خرچ پر قرنطینہ کرنا ہوگا

بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کا ائیر پورٹس پر ریپڈ ٹیسٹ آج سے شروع ہوگیا جس کے لیے اسلام آباد ميں تين قرنطينہ سینٹرز بھی قائم کیے گئے ہیں۔

 مسافروں کے رييپڈ ٹيسٹ کے لیے محکمہ صحت کی ٹیمیں مختلف ائیرپورٹس پر تعینات کر دی گئیں۔

وزارت صحت کے مطابق رپورٹ 20 منٹ میں ملے گی جبکہ رپورٹ مثبت آنے پر مسافر کو اپنے خرچ پر قرنطینہ کرنا ہوگا۔ اسکے بعد 8دن بعد مسافر کا دوبارہ ٹیسٹ کیا جائے گا اور ٹيسٹ منفی آنے پر ہی مسافر کو گھر جانے کی اجازت ہوگی۔

اين سی او سی کی ہدايت پر اسلام آباد میں اسسٹنٹ کمشنرز کی زیر نگرانی دو نجی ہوٹلز اور ريسٹ ہاؤس ميں قرنطینہ سینٹرز بھی قائم کر ديے گئے۔

وزارت صحت نے قرنطینہ سینٹرز میں ڈاکٹرز اور طبی عملہ تعینات کر دیا۔ وائرس کے پھيلاؤ کے باعث کیٹیگری سی میں شامل 23 ممالک کے مسافروں کی آمد پر پابندی میں توسیع بھی کردی گئی۔

دوسری جانب کرونا کی روک تھام کے لیے سی اے اے کی جانب سے لاہور ايئرپورٹ پر اقدامات کر لیے گئے۔

ڈپٹی ائیرپورٹ مینجر کے مطابق بیرون ملک سے آنے والوں کی طبی جانچ شروع کر دی، ریپڈ انٹیجنٹ ٹیسٹ کے لیے خون کے نمونے ليے جائيں گے۔ مسافروں کو سی اے اے کا عملہ ٹوکن فراہم کرے گا۔

متعلقہ خبریں