تحریکِ انصاف میں باضابطہ طور پر جہانگیر ترین ہم خیال گروپ کا اعلان

پاکستان کی حکمران جماعت تحریک انصاف میں باقاعدہ طور پر فارورڈ بلاک بن گیا ہے۔ اس بات کا اعلان پنجاب کے صوبائی وزیر نعمان لنگڑیال نے منگل کے روز لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کیا۔
ان کا کہنا تھا کہ ’گروپ کا نام جہانگیر ترین ہم خیال گروپ رکھا گیا ہے جو قومی اور پنجاب اسمبلیوں میں اپنے پارلیمانی لیڈرز بھی مقرر کرے گا۔‘
’قومی اسمبلی کے لیے ایم این اے راجا ریاض جبکہ پنجاب اسمبلی کے لیے ایم پی اے سعید اکبر نوانی پارلیمانی لیڈر ہوں گے۔‘ 
نعمان لنگڑیال کی میڈیا گفتگو سے پہلے منگل کی رات ماڈل ٹاؤن لاہور میں جہانگیر خان ترین کی رہائش گاہ پر ترین گروپ کے اراکین اکٹھے ہوئے جن کو عشائیہ دیا گیا تھا۔
مزید پڑھیں
عشائیے سے پہلے ایک اجلاس بھی منعقد ہوا جس میں تمام ارکان نے اپنے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ اردو نیوز سے بات کرتے ہوئے تحریک انصاف ترین گروپ کے رکن قومی اسمبلی راجا ریاض نے بتایا کہ ’ہم آج کوئی پہلی مرتبہ اکٹھے نہیں ہوئے۔‘
’یہ ایک مشاورتی اجلاس تھا جس میں فیصلہ کیا گیا کہ ہم خیال گروپ اپنی نظریاتی سیاست کو برقرار رکھے گا، چونکہ مرکز کے ساتھ معاملات بالکل سیدھے نہیں ہیں لہٰذا ہماری اپنی سیاسی شناخت ہونا بھی ضروری ہے۔‘
 انہوں نے کہا کہ ’ہم سب جہانگیر ترین کے ساتھ ہیں اور سب دوست مل کر اس سے آگے بھی جو فیصلے کریں گے وہ متفقہ ہوں گے۔‘
’ہم تحریک انصاف میں ہی ہیں اور ہمیں وزیراعظم عمران خان پر اعتماد ہے کہ وہ ہمارے مسائل سنیں گے اور جہانگیر ترین کی سیاسی کردار کشی بند ہو گی۔‘ 
اس سے قبل اجلاس میں دیگر اراکین سے خطاب کرتے ہوئے راجہ ریاض کا کہنا تھا کہ ’ہمیں ایف آئی اے کی رپورٹ کا انتظار کرنا چاہیے۔ اس کے علاوہ بیرسٹر علی ظفر نے بھی اپنی رپورٹ پیش کرنی ہے اسے بھی دیکھنا چاہیے۔‘

اجلاس میں شریک ایک رکن کے مطابق کہ ’تمام اراکین سے جہانگیر ترین سے وفاداری کا حلف لیا گیا‘ (فوٹو: جہانگیر ترین فیس بُک)
 انہوں نے کہا کہ ’اب ہمارا گروپ کچھ سیاسی فیصلے بھی کرے گا اور یہ فیصلے جہانگیر ترین کی سربراہی میں ہوں گے۔‘ 
اجلاس میں شریک ایک رکن نے بتایا کہ ’اجلاس کے اختتام پر تمام اراکین سے جہانگیر ترین سے وفاداری کا حلف بھی لیا گیا‘ تاہم صوبائی وزیر نعمان لنگڑیال کا کہنا تھا کہ ’آپ اسے حلف نہیں کہ سکتے یہ ایک عہد تھا جو تمام دوستوں نے کیا کہ آئندہ مل کر چلیں گے۔‘
 ’بدھ کے روز جہانگیر ترین کی پیشی ہے جس پر بھی تمام ساتھی ان کے ساتھ عدالت جائیں گے۔ اس اجلاس میں قومی اور صوبائی اسمبلی کے 31 ارکان نے شرکت کی جبکہ کچھ اراکین ذاتی وجوہات کی بنا پر نہیں آسکے۔‘ 

’قومی اسمبلی میں راجا ریاض جبکہ پنجاب اسمبلی میں سعید اکبر نوانی گورپ کے پارلیمانی لیڈر ہوں گے‘ (فائل فوٹو: جہانگیر ترین فیس بُک)
ترین گروپ کے لاہور سے ایم پی اے نذیر چوہان نے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ’سیاسی پارٹیوں میں گروپ بندیاں ہوتی رہتی ہیں۔ اب اگر ہمیں ترین گروپ کہا ہی جا رہا ہے تو ہمیں کھل کر یہ نام اپنانا چاہیے کیونکہ ہم سب جہانگیر ترین سے محبت کرتے ہیں۔‘ 
تحریک انصاف کے ان منحرف اراکین سے جہانگیر ترین نے بھی مختصر خطاب کیا۔ ان کا کہنا تھا ’آئندہ کا لائحہ عمل مل کر تشکیل دیں گے اور جو بھی فیصلہ ہوا وہ متفقہ ہو گا۔‘