جب دیو آنند نے عوامی مقامات پر کالا سوٹ پہننا چھوڑ دیا

ہفتہ 26 جون 2021 15:44

دیو آنند 1970 کی دہائی تک فلموں میں مرکزی کردار ادا کرتے رہے۔ فوٹو اے ایف پی

منفرد انداز اور اداکاری کے لیے مشہور بالی وڈ اداکار دیو آنند کا شمار ان چند اداکاروں میں ہوتا ہے جن کے بے انتہا چاہنے والے تھے۔
دیو آنند 1950 اور 1960 کی دہائی میں بالی وڈ کے تین سپر سٹارز میں سے تھے جنہوں نے کئی دہائیوں تک لوگوں کے دلوں پر راج کیا، بالخصوص خواتین کے۔
دیو آنند کی زندگی میں ایسا بھی وقت آیا جب انہوں نےعوامی مقامات پر کالے رنگ کا سوٹ پہننا چھوڑ دیا تھا۔ جس کی وجہ سنہ 1958 میں پیش آنے والا ایک واقعہ بتائی جاتی ہے۔
مزید پڑھیں
ہندوستان ٹائمز کے مطابق 1958 میں جب دیو آنند کی مدھو بالا کے ساتھ فلم ’کالا پانی‘ ریلیز ہوئی تو اس موقع پر انہوں نے کالے رنگ کا کوٹ پہنا ہوا تھا۔
کہا جاتا ہے کہ دیو آنند کالے کوٹ میں اتنے خوبصورت لگ رہے تھے کہ وہاں موجود ایک لڑکی انہیں اس روپ میں دیکھ کر اس قدر دنگ رہ گئی کہ اس نے مبینہ طور پر خودکشی کر ڈالی۔
ایسی خبریں بھی سامنے آئیں تھیں کہ نوجوان لڑکیوں نے دیو آنند کی ایک جھلک دیکھنے کے لیے عمارت کی چھت سے چھلانگ لگا دی تھی۔
دیو آنند کا شمار اپنے وقت کے بے انتہا کامیاب اداکاروں میں ہوتا ہے جنہوں نے 1970 کی دہائی میں آنے والی فلموں میں بھی مرکزی کردار ادا کیا۔ جب ان کے ساتھی اداکار راج کپور اور دلیپ کمار نے یا تو بطور ڈائریکٹر کام کرنا شروع کر دیا تھا اور یا پھر سینیئر اداکار کے طور پر فلموں میں آتے تھے۔
دیو آنند اداکاری کے علاوہ ہدایت کار اور ڈائریکٹر کے طور پر بھی کام کر رہے تھے۔
مقبول ترین اداکارہ زینت امان کو سنہ 1971 کی فلم ’ہرے راما ہرے کرشنا‘ میں متعارف کروانے والے بھی دیو آنند ہی تھے۔