جنگ بندی کے باجود اسرائیلی فورسز کی کارروائياں جاری

مسلمانوں پر حملے، ایک بچہ اور 2صحافی گرفتار

جنگ بندی کے اعلان کے باوجود فلسطينی علاقوں ميں صيہونی فورسز کی جانب سے فلسطینیوں کی گرفتاریاں اور ان پر حملوں کی کارروائیاں جاری ہیں۔

غیر ملکی ميڈيا کے مطابق صیہونی فورسز نے تازہ کارروائيوں ميں بچے اور صحافيوں کو گرفتار کرنے کے علاوہ فائرنگ سے ايک لڑکی کو معذور بھی کردیا جبکہ مسلمانوں کو تاحال ان کے گھروں سے نکالے جانے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

جنگ بندی معاہدے کو ہفتہ ہوگيا مگر لیکن مشرقی بيت المقدس کے علاقے میں فلسطینیوں کو اب بھی جبری بے دخلی کا سامنا ہے۔صيہونی قبضے کے خلاف آواز اٹھانے پر شيخ جراح ميں 2 صحافيوں کو گرفتار کرليا گيا جبکہ قصبہ جارحہ ميں قابض فورسز آبادي نے اندھا دھند گولياں چلائيں۔جنوبی غزہ ميں 10 برس کے بچے کو فورسز پر حملے کے الزام ميں گرفتار کيا گيا جبکہ خان يونس ميں حماس کی جانب سے ملٹری پريڈ بھی ہوئی جس میں ہزارروں افراد شریک ہوئے۔ حماس نے اسرائيل کو خبردار کيا کہ مسجدِ اقصیٰ کا دفاع کرنے والے ابھی زندہ ہيں۔

متعلقہ خبریں