خاتون ٹیچر کو ہراساں کرنیوالے اسسٹنٹ پروفیسرکو 10سال کی سزا

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ کراچی نے جامعہ کراچی کے اسسٹنٹ پروفیسر خاتون ٹیچر کو ہراساں کرنے کا مرتکب قرار دیتے ہوئے 10 سال قید اور 50 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنادی۔

جامعہ کراچی کے سابق اسسٹنٹ پروفیسر کو خاتون پروفیسر کو ہراساں کرنے پر 10 سال قید کی سزا سنادی ہے۔ پروفیسر فرحان کامران پر خاتون پروفیسر کو انٹرنیٹ کے ذریعے ہراساں کرنے کا الزام تھا۔

جامعہ کراچی کے سابق اسسٹنٹ پروفیسر کو 10 سال قید کی سزا سنا دی گئی

پروفیسر فرحان کامرانی کو خاتون پروفیسر کو ہراساں  کرنے پر  سزا سنائی گئی۔

مقامی عدالت نے پروفیسر فرحان پر 50 ہزار جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔ ایف آئی اے کے مطابق فرحان کامرانی نے خاتون پروفیسر کی نازیبا تصاویر اپلوڈ کی تھیں۔

فرحان کامرانی سائیکالوجی ڈپارٹمنٹ کے سابق اسسٹنٹ پروفیسر ہیں، جنہیں سزا کیلئے جیل بھجوادیا گیا۔

انویسٹی گیشن افسر کے مطابق خاتون پروفیسر نے ایف آئی اے میں شکایت درج کرائی تھی۔

سابق پروفیسر نے دوران تفتیش خاتون پروفیسر کے نام سے جعلی فیس بک اکاؤنٹ بنانے اور تصاویر اپ لوڈ کرنے کا اعتراف کیا تھا۔

متعلقہ خبریں