ذہنی صحت کی خاطر اولمپکس مقابلہ چھوڑ جانے پر سیمون بائلز کی حمایت

بدھ 28 جولائی 2021 13:21

سیمون بائلز نے منگل کو اچانک ٹیم فائنل سے نکل کر کھیل کی دنیا کو حیران کر دیا تھا۔ فوٹو: روئٹرز

اپنی ذہنی صحت کے غرض سے اچانک اولمپک فائنل چھوڑنے والی امریکی ایتھلیٹ سیمون بائلز اولمپکس میں اپنے مستقبل کے بارے میں سوچ میں ہیں۔ جبکہ اپنی ذہنی صحت کو ترجیح دینے پر انہیں کئی دیگر ایتھلیٹس اور مشہور شخصیات نے سراہا ہے۔
ٹوکیو گیمز میں سٹار سمجھی جانے والی امریکی ایتھلیٹ سیمون بائلز نے منگل کو اچانک ٹیم فائنل سے نکل کر کھیل کی دنیا کو حیران کر دیا تھا۔
مزید پڑھیں
تاہم 24 سالہ اولمپک چیمپیئن نے بعد میں بتایا تھا کہ وہ اپنی ذہنی صحت کے لیے مقابلے کو بیچ میں چھوڑ کر نکل گئی تھیں۔
ان کا کہنا تھا کہ ’مجھے اپنی ذہنی صحت پر دھیان دینا ہے۔ میں وہاں جا کر کچھ الٹا سیدھا کر کے خود کو تکلیف نہیں پہنچانا چاہتی تھی۔ ہم نہیں چاہیں گے کہ ہمیں یہاں سے سٹریچر پر لے جایا جائے۔‘
سیمون بائلز کے فیصلے کو بڑے پیمانے پر سراہا گیا ہے اور اسے کھیل کی دنیا میں اہم اقدام قرار دیا جا رہا ہے کیونکہ اس سے ذہنی صحت سے متعلق منفی سوچ ختم کرنے میں مدد ملے گی۔
یہ بات ابھی واضح نہیں کہ وہ اولمپکس کے بقیہ مقابلوں میں حصہ لیں گی یا نہیں۔
انہیں جمعرات کو ایک مقابلے میں حصہ لینا ہے اور اتوار کے ایک مقابلے کے لیے بھی اہل ثابت ہوئی ہیں۔
سیمون بائلز نے منگل کو کہا تھا کہ وہ روزانہ کی بنیاد پر دیکھیں گی کہ وہ مقابلوں کے لیے تیار ہیں یا نہیں۔

سیمون بائلز کو اپنی ذہنی صحت کو ترجیح دینے پر کئی مشہور شخصیات نے سراہا ہے۔ فوٹو: اے ایف پی
امریکی چینل این بی سی کے پروگرام ’ٹوڈے‘ پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’جسمانی طور پر وہ اچھا محسوس کرتی ہیں۔ ہم ایک ایک دن کر کے دیکھیں گے۔‘
سیمون بائلز کو اپنی ذہنی صحت کو ترجیح دینے پر کئی مشہور شخصیات نے سراہا ہے۔
یو ایس اولمپکس اینڈ پیرالمپک کمیٹی کی چیف ایکزیکٹیو آفیسر سیراہ ہرشلینڈ نے لکھا کہ ’آپ جس طرح کی انسان، ٹیم میٹ اور ایتھلیٹ ہیں، ہمیں اس پر فخر ہے۔ ہم آپ کے اپنی ذہنی صحت کو ترجیح دینے کے فیصلے کو سراہتے ہیں اور ٹیم یو ایس اے کمیونٹی آپ کے آگے کے سفر کے لیے مکمل حمایت کی پیشکش کرتے ہیں۔‘
سابق امریکی صدر براک اباما کی اہلیہ مشیل اباما نے نے بھی سیمون بائلز کے فیصلہ کو سراہا۔