روس:زیرحراست سیاست دان نوالنی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل

  

روس نے حزب اختلاف کے زیر حراست رہنما الیکسی نوالنی اور ان کے چند قریبی ساتھیوں کو دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کر دیا ہے۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹد پریس کی رپورٹ کے مطابق روسی حکام کے اس اقدام کے بعد بینک اس قانون کے پابند ہیں جس کے مطابق اس رجسٹری میں شامل افراد کے اثاثے منجمد کیے جائیں گے۔

الیکسی نوالنی روسی صدر ولادیمیر پوٹن کے سخت ترین ناقد ہیں اور سن 2014 میں دھوکہ دہی کی معطل سزا کی شرائط کی خلاف ورزی کے جرم پر دو سال چھ ماہ کی قید کی سزا بھگت رہے ہیں۔

الیکسی نوالنی کے اعلیٰ معاونین لیوبوف سوبول اور جارجی البروف کو بھی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ نوالنی کو اس وقت حراست میں لیا گیا جب وہ زہر خورانی کے بعد جرمنی سے پانچ ماہ تک علاج کروانے کے بعد روس واپس آئے تھے۔ ایک سال قبل نوالنی کی گرفتاری کے خلاف ملک بھر میں بڑے عوامی مظاہرے دیکھنے میں آئے جنہیں حالیہ برسوں میں سب سے بڑے مظاہرے قرار دئے گئے تھے۔

روسی سیاست دان نے الزام لگایا تھا کہ انہیں یہ زہریلہ مادہ روسی حکومت کے ایما پر دیا گیا تھا تاہم روسی حکام نے اس میں ملوث ہونے کی تردید کی ہے۔

تازہ ترین

بریگیڈیئر(ر) مصدق عباسی مشیر برائے داخلہ و احتساب مقرر
یوکرائن پر روسی حملہ دنیاکو بدل کررکھ دے گا،امریکی صدر
روس:زیرحراست سیاست دان نوالنی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل
ویڈیو: رکن سندھ اسمبلی صداقت حسین بھی گرفتار