سری لنکن کابینہ نےبرقعہ پہننےپابندی کی منظوری دیدی

فوٹو: الجزیرہ

سری لنکن کابینہ نے عوامی مقامات پر برقعہ پہننے پر پابندی کی منظوری دیدی۔

الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق سری لنکن کابینہ نے عوامی مقامات پر برقعہ پہننے یا چہرہ مکمل ڈھانپنے پر پابندی کی منظوری دی تاہم پابندی کا اطلاق پارلیمنٹ سے منظوری کے بعد کیاجائے گا۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ برقعہ یا مکمل چہرہ ڈھانپنے کےلیے حکومت اکثریت میں موجود ہے، مذہبی آزادی سے متعلق اقوام متحدہ کےنمائندے نے پابندی کو عالمی قوانین کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔

سری لنکا: مسلمان خواتین کے نقاب پرپابندی، مدارس بندکرنیکا فیصلہ

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ سری لنکا نے ملک بھر میں ہزار سے زائد اسلامی اسکولوں کو بند کرنے اور خواتین کے نقاب لگانے پر پابندی عائد کرنےکا فیصلہ کیا تھا۔

سری لنکا کے پبلک سیکیورٹی کے وزیر سارتھ ویرا سیکیرا کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر خواتین کے چہرہ مکمل ڈھانپنے پر پابندی لگائی جارہی ہے، ملک میں مدارس بند کرنے کی بھی منصوبہ بندی کررہے ہیں، پابندی کے مسودے پر دستخط کرکے کابینہ کو بھیج دیا گیا تھا۔

قبل ازیں سری لنکا میں مسلمان خواتین کےنقاب پہننے پر پابندی لگادی گئی تھی جبکہ حکومت نے کئی مدارس بھی بند کرنے کا فیصلہ کیاتھا۔

متعلقہ خبریں