سندھ:نویں اوردسویں کے امتحانات کی تاریخ کا اعلان کردیا گیا

فائل فوٹو

وزیر تعلیم سندھ کے مطابق 9 ویں اور 10 ویں جماعت کے امتحانات کا آغاز بروز پیر 5 جولائی سے ہو رہا ہے۔ امتحانات میں 3 لاکھ 48 ہزار 249 طلبہ سائنس، جنرل گروپ ریگولر اور پرائیویٹ کے امتحانات دينگے۔

سندھ حکومت کی جانب سے امتحانات سے متعلق نوٹی فیکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔ صوبائی حکام کے مطابق امتحانات کے دوران کرونا ايس او پيز کا مکمل خیال رکھا جائے گا۔

قبل ازیں جاری اعلامیہ کے مطابق امتحانی پرچے 50 فیصد ایم سی کیوز، 30 فیصد مختصر اور 20 فیصد طویل جوابات پر مشتمل ہوں گے۔

۔9 ویں اور 10 ویں جماعت کے امتحانات کیلئے 438 امتحانی مراکز قائم کیے گئے ہیں۔

امتحانی مراکز پر دفعہ 144 نافذ رہے گی، جس کیلئے متعلقہ اداروں کو آگاہ کردیا گیا ہے۔

کلاس 9 سائنس گروپ کے طلبہ و طالبات 4 پرچے دینگے۔

سائنس گروپ میں ریاضی، فزکس، کیمسٹری، بائیولوجی یا کمپیوٹر کا پرچہ دینا ہوگا۔

کلاس 10ویں سائنس گروپ کے طلبہ و طالبات 2 پر چے دینگے۔

کلاس 10 ویں سائنس گروپ میں فزکس اور میتھس کا پرچہ دینا ہوگا۔

کلاس 9 ویں جماعت جنرل گروپ کے طلبہ و طالبات 4 پرچے دینگے۔

کلاس 9 ویں جنرل گروپ میں جنرل میتھس، جنرل سائنس، اکنامکس ، سوکس یا منتخب کردہ پرچہ دینگے۔

کلاس 10 ویں جنرل گروپ کے طلبہ و طالبات 2 پرچے دینگے۔

جنرل گروپ کے طلبہ اکنامکس، سوکس، یا منتخب کردہ پرچے دینگے۔

کلاس 9 ویں جماعت کے طلبہ و طالبات نیو اسکیم آف اسٹیڈیز کے مطابق پرچے دینگے۔

والدین، طلبا اور طالبات کی سہولت کیلئے سینٹرز کی لسٹ ویب سائٹ پر اپ لوڈ کردی گئی ہے،جس کا ایڈریس مندرجہ ذیل ہے۔

www.bsek.edu.pk

ذیل میں 9ویں اور 10 جماعت کے امتحانات کی ڈیٹ شیٹ دی گئی ہے۔

وزیر تعلیم سندھ کا کہنا تھا کہ اس سال تحريری امتحانات صرف اختياری مضامين کے ہوں گے۔ 50 فيصد ايم سی کيوز،30 فيصد مختصر جوابات اور 20 فيصد طويل جوابات پرچوں میں شامل ہونگے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق امتحانات کا وقت 3 گھنٹے سے کم کرکے 2 اور 2 گھنٹے سے کم کرکے1 گھنٹے ہوگا۔ پہلی جماعت سے 8 ویں جماعت کے امتحانات اسکول اپنی سہولت کے تحت لے سکیں گے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل صوبائی وزیر تعلیم سعید غنی کا کہنا تھا کہ 12 ویں جماعت کے امتحان 26 جولائی سے شروع کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ گزشتہ سال 2020 میں کرونا وائرس کے باعث بچوں کو بغیر امتحانات اگلے جماعتوں میں پروموٹ کیا گیا تھا۔

متعلقہ خبریں