سندھ اور پنجاب ميں کرونا کی خطرناک اقسام کاپھيلاؤ تيز ہوگیا

ایک سے دوسرے شخص میں پھیلاؤ بھی سو فیصد ہے

Your browser does not support the video tag.

کرونا کی خطرناک اقسام  کا پھیلاؤ سندھ اور پنجاب ميں تيز ہونے لگا ہے۔ سندھ ميں مثبت کيسز ميں بھارتی ويرينٹ کی شرح 50 فيصد ہوگئی۔ لاہور میں ڈیلٹا قسم کے 50 کیسز سامنے آگئے۔

ملک ميں مزيد 2607 افراد ميں وائرس کی تصديق ہوئی ہے۔ این سی او سی نے عيد کے پہلے دن ويکسينيشن سينٹر بند رکھنے کا اعلان کردیا۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ لاہور میں ڈیلٹا وائرس کے اس قسم کے پھیلاؤ کی شرح خطرناک حد تک زیادہ ہے۔ وائرس کی بھارتی قسم کا ایک سے دوسرے شخص میں پھیلاؤ بھی سو فیصد تک ہے۔ بھارتی وائرس کا پھيلاؤ انتہائی خطرناک ہے۔

محکمہ صحت پنجاب نے شہر سے رپورٹ ہونے والے کیسز کی سائنٹیفک تحقیق کے بعد کہا ہے کہ تہتر کیسز میں سے 50 کرونا کی بھارتی قسم کے ثابت ہوئے ہیں۔

محکمہ صحت پنجاب کے مطابق گزشتہ 15 روز کے دوران رپورٹ ہونے والے کیسز پر تجربہ کیا جارہا ہے۔ تحقیق کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں 70 فیصد کیسز ڈیلٹا قسم کے ہی‍ں۔

واضح رہے کہ 24 گھنٹے کے دوران پنجاب سے کرونا وائرس کے 415 مزید کیسز رپورٹ ہوئے۔ لاہور سے کرونا کے رپورٹ ہونے والے کیسز کی تعداد 246 ہے۔

متعلقہ خبریں