سندھ میں ریسٹورنٹس کو ٹیک اوے کی اجازت مل گئی

Restaurants

فائل فوٹو

سندھ میں ریسٹورنٹس کو واضح شرائط کے تحت ٹیک اوے کی سہولت دے دی گئی ہے۔

وزیراعلیٰ سندھ  سید مراد علی شاہ کی صدارت آج کرونا وائرس کے ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا جس میں انتظامیہ کے علاوہ ماہرین نے بھی شرکت کی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ٹیک اوے کے لیے جانے والے شہری اپنی گاڑی سے نہیں اُتریں گے جبکہ ریسٹورنٹس کو کرسیاں لگانے کی بالکل بھی اجازت نہیں ہوگی۔ خلاف ورزی کی صورت میں ریسٹورنٹس کو سیل کر دیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے ہدایت کی کہ ایکسپو ویکسینیشن سیینٹر عید کے دوران کھلا رکھیں جبکہ صوبے بھر میں جہاں بھی ویکسینیشن یونٹس قائم ہیں اُنہیں عید پر کھلا رکھیں۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ نئے ویکسنیشن سینٹرز شہر میں قائم کریں۔ عید کے بعد حیدرآباد، میر پورخاص اور دیگر ڈویژنل ایچ کیوز میں ویکسینیشن سینٹرز قائم ہونی چاہئیں۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ گذشتہ سال عید الفطر 20 مئی 2020 کو ہوئی تھی اور عید پر لوگوں کا ملنا جلنا بڑھ گیا تھا جس کی وجہ سے 30 فیصد کیسز بڑھ گئے تھے۔ اس سال عوام سے میری پُرزور اپیل ہے کہ اپنے رشتہ داروں کو اپنے گھر آنے سے روکیں۔

صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ نے ویڈیو پیغام میں کہا کہ عوام سے درخواست ہے کہ انتظامیہ سے تعاون کریں۔ اجلاس میں جو سب سے بڑی تشویش ظاہر کی گئی وہ تھی عید پر عوام کا ایک دوسرے سے ملنا جلنا اور ایک دوسرے کے گھروں کو جانا ہے۔

انہوں نے کہا یہ بات میں افسوس سے کہہ رہا ہوں کہ گذشتہ سال عید کے موقع پر لوگ ایک دوسرے سے ملنے کے لیے گھروں پر چلے گئے جس کے نتیجے میں کرونا کے کیسز میں 30فیصد اضافہ ہوا۔

ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیراعلیٰ سندھ اور ماہر ڈاکٹروں نے عوام سے درخواست کی ہے کہ عید صرف اپنے گھر میں اپنے بچوں کے ساتھ منائیں۔ آپ جتنا احتیاط کریں گے اُتنا آپ، آپ کے بچے، آپ کے رشتے دار اور دوست احباب محفوظ رہیں گے۔

اجلاس میں فیصلہ ہوا کہ عید کی چھٹیوں کے دوران  صوبے بھر میں ویکسینیشن سینٹرز کھلے رہیں گے، عوام جائیں اور ویکسین کروائیں۔

متعلقہ خبریں