سوشل میڈیا پر خواتین کیساتھ بدتمیزی کرنیوالا یوٹیوبر گرفتار

گوجرانوالہ: گرفتار یوٹیوبر ملزم

سوشل میڈیا پر خواتین کو ہراساں کرنے اور ویڈیوز بنا کر آپ لوڈ کرنے والے یوٹیوبر کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ملزم خان علی کے سوشل میڈیا پر 11 لاکھ فالورز ہیں۔

ملزم کا تعلق گوجرانوالہ سے ہے۔ ملزم ويڈيو وائرل کرکے پيسے کماتا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ کمائی کيلئے خواتين سے بدتميزی کی اجازت نہيں دے سکتے۔

خان علی کے فیس بک پر 11 لاکھ اور یوٹیوب پر 3 لاکھ 23 ہزار فالورز ہیں۔ علی خان کا کہنا ہے کہ وہ فالورز بڑھانے کیلئے ویڈیوز بناتا تھا، جس پر معافی چاہتا ہے۔ ملزم پر خواتین کے ساتھ پرینک کرتے ہوئے حد سے تجاوز کرنے کا الزام ہے۔

پولیس کے مطابق خان علی فیس بک پیج اور یوٹیوب چینل چلاتا تھا اور شہریوں خصوصاً خواتین سے ایسی حرکتیں کرتا تھا جس کے جواب میں اسے تھپڑ رسید کئے جاتے اور وہ ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہوجاتی تھیں۔

گکھڑ منڈی پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ ملزم خان علی کے خلاف تعزیرات پاکستان 354جب کہ سیکشن 506 بی ، دفعہ 249 اور 34 کے تحت مقدمات درج کیے گئے ہیں۔ مقدمات میں نازیبا حرکات، ہراساں کرنا سمیت دیگر الزامات عائد ہیں۔ ملزم کو جمعے کو ریمانڈ کیلئے عدالت ميں پیش کیا جائے گا۔

ملزم کے ریمانڈ اور عدالتی فیصلے کے بعد خان علی کے چینل اور فیس بک صفحے کو بند کرنے یا نہ کرنے سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔

تعزیرات پاکستان کی دفعہ 354 میں ایسے شخص کیلئے 2 سال قید کی سزا مقرر کی گئی ہے جو کسی عورت کی عزت و ناموس کو پامال کرنے کے لئے اس پر حملہ کرتا ہے۔

506/B

یہ پستول کے ساتھ جان سے مار دینے کی دھمکی کی دفعات پر مبنی ہے۔