سپریم کورٹ میں شرخ منافع کی مساوی اورمنصفانہ تقسیم سےمتعلق آئینی درخواست دائر

فوٹو: ڈیلی ٹائمز

سپریم کورٹ میں بینکس کے شرخ منافع کی مساوی اور منصفانہ تقسیم سے متعلق آئینی درخواست دائر کردی گئی ہے۔

جمعرات کو سپریم کورٹ میں درخواست اکانومسٹ اور بینکرشاہد حسین صدیقی نےحشمت حبیب ایڈووکیٹ کےذریعےدائرکی۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ

افراطِ زر کی تناسب سے شرخ منافع 2 فیصد زیادہ دیا جائے۔ یہ بھی استدعا کی گئی ہے کہ عدالت ستمبر2013 سے جون 2020 کے دوران جاری تمام سرکلرز کو منسوخ کرے اوراسٹیٹ بینک نجی بینکوں کو سالانہ شرخ منافع 2.5 رکھنے کی ہدایت کرے۔

درخواست گزار نے کہا ہے کہ اسٹیٹ بینک شرخ منافع کے حوالہ سے مساوی اور منصفانہ پالیسی بنائے اور نئی پالیسی میں خسارے،معیشت پرمنفی اثرات،بینکس کےاستحصالی رویوں کا سدباب کیاجائے۔

درخواست کا متن ہے کہ بینک،اسٹیک ہولڈر،سرمایہ کار کے درمیان شرخ منافع کی مساوی تقسیم کا طریقہ بھی واضح کیا جائے اورسپریم کورٹ،بینکس اوروزرات خزانہ کواس حوالہ سےقانونی ذمہ داریاں نبھانےکی پابند کرے۔