سپریم کورٹ کا2 دن میں آکسیجن سلنڈرزکی قیمت مقرر کرنے کا حکم

فوٹو: ٹوئٹر

سپریم کورٹ نے 2 روز میں آکسیجن سلنڈرز کی قیمت مقرر کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

بدھ کو سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کرونا وائرس ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔ سپریم کورٹ کی جانب سے وزارت صنعت و پیدوار کو قیمت کے تعین کے لیے حکم جاری کیا گیا۔ سپریم کورٹ نے ہدایت کی ہے کہ قیمت کے تعین  کا طریقہ کار بھی وضح کیا جائے تاکہ صوبائی حکومت سمیت کسی کو بھی سلنڈر کی خریداری میں مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

عدالت نے قیمت مقرر کرنے کا حکم خیبر پختونخواحکومت کی درخواست پر جاری کیا۔ ایڈوکیٹ جنرل خیبرپختونخوا شمائل بٹ نے موقف اختیار کیا تھا کہ آکسیجن سلنڈر کی قیمت مقرر نہ ہونے پر سپلائرز من مانے ریٹ وصول کررہے ہیں اور صوبائی حکومت کو پریشانی کا سامنا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ عدالت ڈریپ کو حکم دے کہ سلنڈر کی قیمت مقرر کرے۔

ڈریپ کا سربراہ کا کہنا تھا کہ آکسیجن وزارت صنعت کے ماتحت ہے اوراس سے ہمارا کوئی تعلق نہیں ہے۔

عدالت نے این ڈی ایم اے کی رپورٹ بھی مسترد کردی ہے اور کہا ہے کہ جس  نجی کمپنی کو سپلائی کے لیے سہولت دی گئی وہ غیر تسلی بخش ہے اور جس کرنسی میں ان کو ادائیگی کی گئی وہ بھی نہیں بتائی گئی ہے۔

متعلقہ خبریں