سکولوں کی بندش سے’پوری نسل کی تباہی‘کاخدشہ، اقوام متحدہ کا انتباہ

اقوام متحدہ کے دو اداروں نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے 19 ممالک میں سکول بند ہونے سے 15 کروڑ سے زائد بچے متاثر ہوئے ہیں اور اس سے ’پوری نسل کی تباہی‘ کا خطرہ ہے۔
پیر کو یونیسیف اور یونیسکو کے حکام نے کہا کہ ’حکومتوں نے کئی مرتبہ سکول بند کیے ہیں اور انہیں لمبے عرصے تک بند کیے رکھا۔ حتیٰ کہ اس وقت بھی سکولوں کو بند کیا گیا جب اس کی ضرورت نہیں تھی۔‘
مزید پڑھیں
یونیسیف اور یونیسکو نے مشورہ دیا ’سکول سب سے آخر میں بند ہونے چاہیں اور سب سے پہلے کھلنے چاہیں۔‘
یونیسیف کے اہلکار ہینریتا فور نے کہا کہ ’ہم فیصلہ سازوں اور حکومتوں سے اپیل کرتے ہیں کہ نسلوں کی تباہی سے بچانے کے لیے محفوظ طریقے سے سکولوں کو کھولنے کو ترجیح دیں۔‘
ان کا کہنا تھا کہ ’سکول بند کرنے سے ہمارا مستقبل متاثر ہو سکتا ہے۔ ہم سکولوں کو محفوظ طریقے سے کھول سکتے ہیں اور ہمیں یہ کام لازمی کرنا چاہیے۔‘
جان ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق دنیا بھر میں وبا سے 18 کروڑ 69 لاکھ سے زائد افراد متاثر ہوچکے ہیں اور ہلاکتوں کی تعداد 40 لاکھ 35 ہزار سے تجاوز کر چکی ہے۔
دنیا میں بالترتیب امریکہ، انڈیا اور برازیل کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔
امریکہ میں وبا کے آغاز سے اب تک تین کروڑ 38 لاکھ سے زیادہ افراد متاثر جبکہ چھ لاکھ سات ہزار ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

انڈیا میں بھی متاثرین کی تعداد تین کروڑ سے بڑھ چکی ہے (فوٹو اے ایف پی)
انڈیا میں بھی متاثرین کی تعداد تین کروڑ سے بڑھ چکی ہے اور پانچ لاکھ 34 ہزار کے قریب اموات ہوئی ہیں۔
برازیل میں ایک کروڑ تقریباً ایک کروڑ 91 لاکھ لوگ متاثر جبکہ پانچ لاکھ 34 ہزار ہلاک ہوئے ہیں۔