صیہونی فورسز کا بیت المقدس میں مردو خواتین پربدترین تشدد

فائل فوٹو

اسرائیلی فوج نے بیت المقدس میں باب العامود کے نزدیک جمع ہونے والی خواتین اور نوجوانوں کو تشدد کا نشانہ بنایا اور گولیاں بھی چلائیں۔

صہيونی فورسز نے نماز فجر کے وقت مقبوضہ بيت المقدس ميں باب العامود پر حملے کے دوران کمپاؤنڈ ميں موجود فلسطينی نوجوانوں پر گولياں داغیں اور پھر اندر گھس کر نوجوانوں پر لاتوں اور ڈنڈوں سے تشدد کيا۔

صہيونی فوجیوں نے خواتين کو بھی نہيں بخشا اور انہيں مار پيٹ کر کمپاؤنڈ سے باہر نکالا، خواتین کو گردن سے پکڑ کر گھسيٹا بھی گیا۔ اس دوران ایک زخمی خاتون زمین پر پڑی تکليف سے کراہتی رہیں لیکن حملہ آور فوجیوں نے امدادی کارکنوں کو ان کی مدد نہیں کرنے دی۔

صہیونی فورسز نے اس موقع پر کئی افراد کو گرفتار کیا۔ اسرائيلی فورسز نے مقبوضہ بيت المقدس کے اولڈ ٹاؤن ميں فولادی رکاوٹيں بھی لگاديں۔

متعلقہ خبریں