عثمان مرزاکیخلاف جوڑے نےاپنےبیانات ریکارڈ کرادیئے

فوٹو: ٹوئٹر

اسلام آباد میں بلیک میل اور تشدد کا نشانہ بننے والے لڑکی اور لڑکے کو پولیس کیس کا حصہ بنانے میں کامیاب ہوگئی۔ دونوں نے اپنے بیانات ریکارڈ کرادیئے۔

متاثرہ جوڑے نے پولیس کو علیحدہ علیحدہ ضابطہ فوجداری کی دفعہ 161 کے تحت بیانات ریکارڈ کرادیے۔ پولیس نے دونوں کے بیانات کو تفتیش کا حصہ بنادیا۔

پولیس حکام کے مطابق متاثرین مکمل تحفظ اور قانونی امداد کی یقین دہانی پر کیس میں شامل ہونے پر راضی ہوئے۔

دونوں متاثرین نے راولپنڈی میں وفاقی پولیس کو بیان ریکارڈکرائے ہیں جبکہ وفاقی پولیس کی خاتون افسر بھی بیان ریکارڈ کراتے وقت موجود تھیں۔

اس سے قبل گزشتہ دنوں اسلام آباد میں لڑکے اور لڑکی کو دھمکیاں اور تشدد نشانہ بنانے والے عثمان مرزا کو پولیس نے تین ساتھیوں سمیت گرفتار کرلیا ہے۔ گرفتار کیے گئے ملزمان میں مرکزی ملزم عثمان مرزا، عطا الرحمان ، فرحان اور مدارس بٹ شامل ہیں۔

اسلام آباد:لڑکے،لڑکی کوبرہنہ کرکےتشدد کرنےوالا مرکزی ملزم گرفتار

دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے واقعے کا نوٹس لےلیتے ہوئے ملزمان کیخلاف سخت قانونی کارروائی کا حکم دیا ہے۔

یاد رہے کہ دارالحکومت اسلام آباد میں لڑکی اور لڑکے کو بلیک میل اور تشدد کرنے کی ویڈیو منگل کے روز وائرل ہوئی تھی جس میں عثمان مرزا نامی ملزم ایک جوڑے کو بری طرح سے پیٹ رہا تھا، ان کے کپڑے کھینچ رہا تھا، لڑکی کو برہنہ کرنے کی کوشش کر رہا تھا۔

واضح رہے کہ عثمان اور اسکے ساتھیوں نے دو ماہ پہلے لڑکی کی برہنہ ویڈیو بنائی تھی تاہم ملزمان کی جانب سے ویڈیو اب سوشل میڈیا پر وائرل کی گئی۔ ویڈیو کی بنیاد پر ملزمان لڑکے اور لڑکی پر تشدد کے علاوہ اُنہیں بلیک میل کررہے تھے۔

متعلقہ خبریں