’عدم اعتماد کب اور کہاں لانی ہے اس کا فیصلہ پی ڈی ایم کرے گی‘

جمعرات 4 مارچ 2021 15:03

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ’وزیراعظم عمران خان کا اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ سینیٹ میں اپنی شکست چھپانے کی کوشش ہے، ایسے تماشے اور ڈرامے اب نہیں چلیں گے۔‘
جمعرات کو اسلام آباد میں سابق وزیراعظم اور نومنتخب سینیٹر سید یوسف رضا گیلانی کے ہمراہ نیوز کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ’تحریک عدم اعتماد کب اور کہاں لانی ہے اور اس کا فیصلہ پی ڈی ایم کرے گی۔‘
انہوں نے وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’ان کو اپنا رویہ درست کرنا پڑے گا۔‘
مزید پڑھیں
بلاول بھٹو زرداری کے بقول ’عمران خان نے کہا تھا کہ اگر وہ سینیٹ الیکشن ہار گئے تو وہ نئے الیکشنز کا اعلان کریں گے۔‘
انہوں نے سینیٹ میں ڈالے گئے ووٹوں کے حوالے سے کہا کہ ’وزیراعظم عمران خان کو نہیں معلوم، مگر مجھے پتا ہے کہ کس نے کس کو ووٹ ڈالا۔‘
انہوں نے ارکان اسمبلی کے بارے میں یہ بھی بتایا کہ ’مجھے پتا ہے کہ کون وزیراعظم کے ساتھ بیٹھا ہے مگر دل ہمارے ساتھ ہے۔‘
انہوں نے اس بات کا دعویٰ بھی کیا کہ ’انہیں یہ بھی معلوم ہے کہ کس نے بغض عمران میں ووٹ ڈالا اور کس نے بغض حفیظ شیخ میں ووٹ ڈالا۔‘
انہوں نے وزیراعظم کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ ’بہت ہو چکا، اب ہم آپ کو نہیں چھوڑیں گے۔‘
چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ’وزیراعظم اپنے ساتھیوں کا اعتماد کھو چکے ہیں۔ انہیں این آر او نہیں دیا جائے گا۔‘
انہوں نے چیئرمین سینیٹ کے الیکشن کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ’سینیٹ کے علاوہ بھی ہر فورم پر حکومت کے خلاف لڑیں گے۔‘