عمران خان کی مبینہ آڈیو لیک، ’امریکہ کا نام نہیں لینا، صرف کھیلنا ہے‘

سابق وزیراعظم اور پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان اور اُس وقت کے ان کے پرنسپل سیکریٹری اعظم خان کی مبینہ لیکڈ ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں دونوں کو امریکی سائفر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔
آڈیو میں مبینہ طور پر عمران خان کہتے ہیں ’اچھا ہم نے اب صرف کھیلنا ہے، نام نہیں لینا امریکہ کا، بس صرف کھیلنا ہے اس پر کہ یہ گیم پہلے سے تھی۔‘
مزید پڑھیں
اس پر اعظم خان کی جانب سے کہا جاتا ہے کہ ’میں سوچ رہا تھا کہ سائفر پر ایک میٹنگ کر لیتے ہیں.‘
وہ مزید کہتے ہیں کہ ’ایک میٹنگ کریں، شاہ محمود قریشی اور فارن سیکریٹری کی۔ شاہ محمود قریشی یہ کریں گے کہ وہ لیٹر پڑھ کر سنائیں تو جو بھی پڑھ کر سنائیں گے تو اس کو کاپی میں بدل دیں گے۔ وہ میں منٹس میں کر دوں گا کہ فارن سیکریٹری نے یہ چیز بنا دی ہے۔‘
’پھر اینلسز اپنی مرضی کے منٹس میں کر دیں گے تاکہ منٹس آفس کے ریکارڈ میں ہوں۔‘
اعظم خان کے مطابق ’اینلسز یہ ہو گا کہ یہ ایک تھریٹ ہے۔ ڈپلومیٹک لینگویج میں اس کو تھریٹ کہتے ہیں۔ دیکھیں منٹس تو پھر میرے ہاتھ میں ہیں نا، ہم منٹس ڈرافٹ کر لیں گے۔‘
اس کے بعد عمران خان پوچھتے ہیں کہ ’کس کس کو بلائیں، شاہ محمود، میں آپ اور سہیل‘، اس کے جواب میں اعظم خان کہتے ہیں بس۔
اس پر عمران خان کی طرف سے کہا جاتا ہے کہ ’ٹھیک ہے، کل ہی کرتے ہیں۔
اس کے بعد اعظم خان کی طرف سے کہا جاتا ہے کہ ’وہ پڑھ کر سنائیں گے تو میں کاپی کر لوں گا اور ریکارڈ پر آ جائے گا کہ یہ چیز ہوئی ہے۔ آپ فارن سیکریٹری کو سنائیں تاکہ یہ سیاسی نہ ہو اور بیورکریٹک ریکارڈ پر آ جائے۔‘
اس پر عمران خان کہتے ہیں کہ ’نہیں تو اس نے ہی لکھا ہے ایمبیسڈر نے۔
اس کے جواب میں اعظم خان کہتے ہیں کہ ’ہمارے پاس تو کاپی نہیں ہے نا، یہ کس طرح انہوں نے نکال دیا۔‘
جس پر عمران خان کہتے ہیں کہ ’یہ یہاں سے اٹھی ہے، اس نے اٹھائی ہے۔‘
اس سے آگے عمران خان اتنا ہی کہتے ہیں کہ’اینی ہاؤ ہے تو‘
 اس سے آگے بھی وہ کچھ کہتے ہیں تاہم بیچ میں اعظم خان بول پڑتے ہیں اس لیے صاف طور پر سمجھ نہیں آتی کہ وہ کیا کہہ رہے ہیں۔
مبینہ آڈیو سامنے آنے کے بعد عمران خان کے پی ٹی آئی رہنما ڈاکٹر شہباز گل نے ٹویٹ میں لکھا کہ ’میں بہت پہلے ریکارڈ پر لا چکا ہوں کہ سائفر وزیراعظم عمران خان سے چھپایا گیا تھا۔ آج کی آڈیو لیک میں یہ ثابت ہو گیا۔‘