عیدالاضحی پرکروناپھیلنے کا خطرہ،سخت ایس اوپیز جاری

نشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے عید الاضحی پر کرونا وائرس پھیلنے کے خطرے پر سخت ایس او پیز نافذ کردیئے،جب کہ ملک میں کرونا کیسز کی شرح 4 فی صد سے اوپر چلی گئی۔

پاکستان کرونا مریضوں کی تعداد کے حوالے سے مرتب کی گئی فہرست میں 30 ویں نمبر پر پہنچ چکا ہے۔ نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) نے ڈیلٹا وائرس کے خطرناک نتائج سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ عیدالاضحی کی آمد کے پیش نظر کرونا پھیلاؤ کے خطرات لاحق ہیں۔

این سی او سی کا کہنا ہے کہ تمام ہائی رسک سیکٹرز میں ایس او پیز پر عمل درآمد کیلئے خصوصی اقدامات کیے جائیں، جب کہ ایس او پیز اور حفاظتی اقدامات پر عمل درآمد کیلئے ٹیمیں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں۔

دوسری جانب گلگت بلتستان، آزاد کشمیر اور خیبرپختونخوا میں ہوٹل بکنگ کیلئے ویکسی نیشن لازمی قرار دی گئی ہے۔ ریسٹورنٹس، جم، سینما گھر اور شادی ہالز کیلئے بھی ویکسی نیشن کارڈ لازمی ہونگے۔

این سی او سی نے صوبوں کو ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کیلئے تفصیلی ہدایات جاری کردی ہیں۔ مویشی منڈیوں اور عید سے متعلقہ ایس او پیز کے نفاذ کیلئے بھی احکامات جاری کیے گئے ہیں۔ ضلعی اتظامیہ کیلئے تفصیلی چیک لسٹس جاری کی گئی ہے۔ ضلعی انتظامیہ کیلئے بھی تفصیلی چیک لسٹس جاری کر دی گئیں۔

صوبے اپنی اپنی شرح کے لحاظ سے ایس او پیز پر عمل درآمد کے مجاز ہونگے۔

عید الاضحیٰ کے موقع پہ وبا کے پھیلاؤ کی صورت میں، غیر ضروری نقل و حرکت کو محدود رکھنے کے لیے مختلف تجاویز زیر غور ہیں، جن پر عمل درآمد کا فیصلہ کورونا کے پھیلاؤ کو مدنظر رکھ کر آئندہ چند دن میں کیا جائے گا۔ وبا کے پھیلاؤ کے پیش نظر سیر و سیاحت پر پابندی کا بھی امکان ہے۔

قبل ازیں این سی او سی نے ڈیلٹا وائرس کے خطرناک نتائج سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یکم اگست سے ویکسینیشن سرٹیفکیٹ کے بغیر ہوائی سفر کرنے پر پابندی عائد ہوگی۔ ڈیلٹا وائرس درحقیقت بھارتی وائرس ہے جس کو انتہائی خطرناک قرار دے دیا گیا ہے اور پاکستان میں ڈیلٹا وائرس کے کیسز سامنے آنے لگے ہیں جو کرونا کی چوتھی لہر بھی ہو سکتی ہے۔

این سی او سی نے ڈیلٹا وائرس کے حوالے سے زور دیا کہ متعلقہ ایس او پیز پر عمل درآمد اور ویکسین لگوانے کی رفتار کو تیز کر دیا جائے اور پہلے سے نافذ ایس او پیز پر 9 جولائی سے 18 جولائی تک سختی سے عمل درآمد یقینی بنایا جائے گا۔

متعلقہ خبریں