غزہ میں مستقل جنگ بندی کیلئے اسرائیلی وزیرخارجہ مصرپہنچ گئے

PALESTINIAN-ISRAEL-GAZA-CONFLICT

فوٹو: اے ایف پی

اسرائیل اور حماس کے درمیان مستقل جنگ بندی سے متعلق بات چیت کے لیے اسرائیلی وزیر خارجہ گابی اشکنازی 13سال میں پہلی مرتبہ مصر کے دارالحکومت قاہرہ پہنچ گئے۔

اسرائیلی وزیر خارجہ مصری ہم منصب سامح شکری سے ملاقات کریں گے۔

گابی اشکنازی نے تین مختلف عربی، انگریزی اور عبرانی زبانوں میں ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ” 13 سالوں میں کسی اسرائیلی وزیرخارجہ کا پہلا باضابطہ دورہ ہے”۔

دورے سے متعلق انہوں نے مزید لکھا کہ ”ہم حماس کے ساتھ مستقل جنگ بندی کے قیام، انسانی امداد فراہم کرنے کے طریقہ کار اور غزہ میں تعمیر نو پر تبادلہ خیال کریں گے”۔

دوسری جانب مصر کے سینیئر سیکیورٹی عہدیداروں نے اتوار کے روز اے ایف پی کو تصدیق کی کہ حماس کے رہنما اسماعیل ہنیہ بھی تبادلہ خیال کے لیے قاہرہ میں موجود ہوں گ تاہم اس معاملے پر مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئیں۔

عہدیداروں نے مزید بتایا کہ توقع ہے مصر کی انٹیلی جنس کے سربراہ عباس کامل اتوار کو اسرائیل اور فلسطینی علاقوں کا دورہ کرنے والے ہیں۔

واضح رہے کہ مئی کے شروع میں اسرائیل اور حماس کے درمیان 11 دن کی لڑائی کے بعد جنگ بندی کا معاہدہ طے پایا تھا۔ مصر نے دونوں کے درمیان ثالث کا کردار ادا کیا تھا۔