فوج کے ترجمان غلط بیانی نہ کریں، مریم نواز

خاموشی اختیار کرنے کا مشورہ

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار کو مشورہ دیا ہے کہ غلط بیانی سے بہتر ہے خاموشی اختیار کرلیں۔ وہ غلط بیانی کریں گے تو عوام مذاق اڑائیں گے۔

مریم نواز شریف مسلسل دعویٰ کرتی رہی ہیں کہ اسٹیبشلمنٹ مسلم لیگ نواز کے ساتھ بیک ڈور رابطے کرتی ہے۔ گزشتہ روز پاک فوج کے ترجمان نے اس کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ کسی کے ساتھ کسی قسم کے رابطے نہیں۔ کسی کے پاس ثبوت ہیں تو پیش کیے جائیں۔

ہفتے کو ڈسکہ روانگی سے قبل میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ شاید ڈی جی آئی ایس پی آر کے علم میں نہ ہو۔ جب بات ہوتی ہے تو اوپر کے لیول پر ہوتی ہے اور ہر کسی کو اعتماد میں نہیں لیا جاتا۔ جن کو بیک ڈور رابطوں کی ضرورت ہے۔ وہ اس وقت مشکل میں ہیں۔

ترجمان نے یہ بھی کہا تھا کہ کہ پاک فوج کا سیاست سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ اس بارے میں مریم نواز نے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آر میرے لیے محترم ہیں اور اچھے انسان ہیں۔ وہ بذات خود اپنے آپ کو سیاست سے دور رکھتے ہیں مگر جب وہ اس طرح کی بات کریں گے تو عوام میں مذاق اڑے گا۔

مریم نواز نے کہا کہ پچھلے کئی سال سے ایک ایک چیز کھل کر عوام کے سامنے آئی ہے۔ جس طرح 2018 میں قوم کے ووٹوں پر ڈاکا ڈالا گیا، وہ دنیا کے سامنے ہے۔ آپ وہ بات کریں جو دنیا مانے۔ اگر آپ رات کو دن بولیں گے تو لوگوں کو پتہ ہے کہ باہر رات ہے۔ لوگ سمجھیں گے جھوٹ بول رہا ہے۔

انہوں نے میجر جنرل بابر افتخار کو مخاط کرتے ہوئے کہا کہ یہ آپ کی اور ادارے کی ساکھ کیلئے اچھا نہیں ہے۔ اس سے بہتر ہے آپ خاموشی اختیار کرلیں، غلط بیانی نہ کریں۔

متعلقہ خبریں