فیفا ورلڈ کپ: امریکی صدر بائیڈن اور ڈچ وزیراعظم کے درمیان دلچسپ مکالمہ

ورلڈ کپ کے راؤںڈ آف 16 میں نیدرلینڈز نے امریکہ کو 1-3 سے شکست دے کر ایونٹ سے باہر کر دیا (فائل فوٹو: اے ایف پی)

قطر میں جاری فیفا فٹ بال ورلڈ کپ کے راؤنڈ آف 16 کے میچ میں نیدرلینڈز نے امریکہ کو 1-3 سے شکست دے کر ایونٹ سے باہر کردیا۔
اس میچ کے بعد سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر امریکی صدر جو بائیڈن اور نیدرلینڈز کے وزیراعظم مارک روٹ کے درمیان دلچسپ مکالمہ دیکھنے میں آیا۔
میچ سے قبل امریکی صدر نے اپنی فٹ بال ٹیم کا حوصلہ بڑھانے کے لیے ایک ویڈیو پیغام کو ٹوئٹر پر شیئر کیا جس میں وہ فٹ بال ہاتھ میں پکڑے ہوئے کہتے ہیں کہ ’اسے سوکر کہا جاتا ہے، چلو امریکہ۔‘
نیدرلینڈز اور امریکہ کے درمیان جب میچ ختم ہوا تو اس کے بعد ڈچ وزیراعظم مارک روٹ نے امریکی صدر جو بائیڈن کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’معذرت جو، فٹ بال جیت گیا۔‘
دراصل امریکہ میں فٹ بال کو ’سوکر‘ کہا جاتا ہے اور اسی وجہ سے پوری دنیا میں امریکہ پر یہ تنقید کی جاتی ہے کہ اسے ساوکر کے بجائے فٹ بال کہا جائے۔
ڈَچ وزیراعظم کے جواب میں امریکہ صدر جو بائیڈن نے ٹویٹ میں کہا کہ ’میرے خیال سے اس فٹ بال (ڈَچ زبان میں) نہ کہا جائے؟ مذاق کے علاوہ مارک، آپ کی ٹیم اور ملک کو مبارک ہو، نیوزی لینڈ میں دوبارہ میچ ہوگا۔‘
خیال رہے کہ نیدرلینڈز سے ہارنے کے بعد امریکی ٹیم فیفا ورلڈ کپ سے باہر ہوگئی ہے جبکہ نیدرلینڈز کا 10 دسمبر کو ارجنٹائن کے خلاف کوارٹر فائنل میچ ہوگا۔