قومی اسمبلی: شہباز شریف کی تقریر کے دوران ہنگامہ، ارکان میں جھڑپ

قومی اسمبلی کے بجٹ اجلاس میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی تقریر کے دوران حکومتی اراکین کے شدید شور شرابے اور نعرے بازی کے بعد اجلاس ملتوی کر دیا گیا۔
منگل کو قومی اسمبلی میں شہباز شریف کی تقریر کے دوران وفاقی وزرا سمیت پی ٹی آئی کے ارکان سیٹیاں اور ڈیسک پر بجٹ کتاب بجانے میں مصروف رہے۔ اس موقع پر شہباز شریف نے کہا کہ ’ایسا کبھی نہیں ہوا کہ اپوزیشن لیڈر بات کرے تو اس میں خلل ڈالا جائے۔‘
مزید پڑھیں
اجلاس کی کارروائی ملتوی ہونے کے بعد ایوان میں حکومتی اور اپوزیشن اراکین میں جھڑپ بھی ہوئی۔ پی ٹی آئی کے اسلام آباد سے رکن قومی اسمبلی اور وزیراعظم کے معاون خصوصی علی نواز اعوان نے مسلم لیگ کے رکن شیخ روحیل اصغر کو کتاب دے ماری۔
اس دوران حکومتی اور اپوزیشن ارکان آپس میں گتھم گتھا ہو گئے اور ایک دوسرے کے خلاف نعرے بازی کی۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی اور وزیر اطلاعات فواد چوہدری سمیت وفاقی وزرا بھی اپنی نشستوں پر کھڑے ہو گئے اور نعرے بازی کی۔ سپیکر نے ارکان اسمبلی کو ویڈیوز بنانے سے روک دیا۔
اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی تقریر کے دوران مسلم لیگ ن کے ارکان نے انہیں گھیرے رکھا جبکہ حکومتی ارکان ان کے خطاب میں مسلسل خلل ڈالتے رہے۔ 
سپیکر اسد قیصر اس موقع پر بار بار حکومت اور اپوزیشن کے ارکان کو خاموش ہونے اور صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنے کی ہدایات کرتے رہے۔