قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی، 7ارکین کے داخلے پر پابندی

Parliament joint session

فوٹو: آن لائن

قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر نے ايوان ميں ہنگامہ آرائی کرنے والے 7 اراکين کے داخلے پر پابندی لگا دی۔

ان 7 اراکین میں سے حکومتی جماعت تحریک انصاف کے 3، مسلم لیگ ن کے بھی 3 جبکہ پیپلز پارٹی کا ایک رکن شامل ہے۔

کارروائی علی نواز اعوان، عبدالمجید، فہیم خان، شیخ روحیل اصغر ن، علی گوہر خان ن، چوہدری حامد حمید ن اور آغا رفیع اللہ کے خلاف کی گئی۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کے مطابق اراکین پر پابندی اگلے احکامات تک جاری رہے گی۔

ویڈیو:قومی اسمبلی میں اراکین کی ہاتھاپائی،ملیکہ بخاری زخمی

واضح رہے کہ گزشتہ روز بجٹ سے متعلق اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی تقریر کے دوران حکومتی اور اپوزیشن ارکان کے درمیان جھگڑا ہوگیا تھا جس پر دونوں طرف سے ایک دوسرے پر بجٹ کاپیاں پھینکی گئیں۔

ایوان میں ہنگامہ آرائی کے دوران پی ٹی آئی رکن اسمبلی ملیکہ بخاری اور سیکیورٹی اہل کار زخمی ہوگیا۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے ارکان کو اپوزیشن لیڈر کے دوران اپنی اپنی سیٹوں پر بیٹھنے کی بار بار تلقین کرتے رہے مگر اراکین نے ایک نہ سنی۔ شہباز شریف کی تقریر کے دوران حکومتی نشستوں سے مسلسل ٹی ٹی کے نعرے لگائے جاتے رہے۔

متعلقہ خبریں