لاہور:پاکستانی نژاد لڑکی کا قتل،سہیلی کا بیان ریکارڈ کرلیاگیا

فائل فوٹو

ڈیفنس میں قتل ہونے والی پاکستانی نژاد لڑکی کی سہیلی کا بیان پولیس نے بیان ریکارڈ کر لیا ہے۔

لاہور کے علاقے ڈیفنس میں پاکستانی نژاد لڑکی اپنے گھر میں مردہ حالت میں پائی گئی تھی جس کے بعد اس کے رشتہ دار کی مدعیت میں 2 افراد کے خلاف قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق اب اس کی دوست جس کے ساتھ اس نے کرایہ پر گھر لیا ہوا تھا، اس نے بھی اپنا بیان سی آئی اے کو ریکارڈ کروایا ہے جس میں اس کا کہنا ہے کہ قتل کی رات مقتولہ اپنے دوستوں سجل اور علی کے ساتھ کئی گھنٹے رہی۔ سجل اور علی، بعد ازاں سحری کے وقت مائرہ کو چھوڑ کر چلے گئے تھے۔

سہیلی کے مطابق مقتولہ اپنی نانی کے گھر جانا چاہتی تھی لیکن سجل اسے ڈیفنس ہی میں رہنے پر اصرار کیا، جس کے بعد سجل اسے چھوڑ کر گئی۔ بیان میں اس کا مزید کہنا تھا کہ ہم دونوں کافی دیر کمرے میں باتیں کرتے رہے اور صبح 4 بجے میں سونے گئے تو مقتولہ نے اپنا کمرہ لاک کر لیا۔

اقرا کا کہنا تھا کل قتل کی رات لندن سے رانی نامی لڑکی اس سے کافی دیر تک باتیں کرتی رہی۔ قتل کیس میں اقرا سمیت 3 افراد زیر حراست ہیں اور پولیس ابھی تک کسی نتیجے پر نہیں پہنچ سکی۔ لندن پلٹ مقتولہ کو گھر میں گولی مار کر قتل کیا گیا تھا۔

جس گھر سے لاش برآمد کی گئی، وہ گھر اقرا نے اپنے نام پر کرایہ پر لیا تھا۔ سماء نے کرایہ نامے کی کاپی بھی حاصل کرلی۔ مقتولہ اور اقرا دونوں اس گھر میں بالائی منزل پر ایک دوسرے کے سامنے علیحدہ علیحدہ کمروں میں رہتی تھیں۔

متعلقہ خبریں