لاہورہائیکورٹ نےریور راوی پراجیکٹ غیرقانونی قراردیدیا

Lahore-ravi-river

فوٹو: آن لائن

لاہورہائیکورٹ نے ریور راوی پراجیکٹ کو کالعدم قرار دیتے ہوئے غیر قانونی  کہہ دیا ہے۔عدالت نے پروجیکٹ پرفوری کام روکنے کا حکم دیا ہے۔

منگل 25 جنوری کو لاہور ہائی کورٹ کےجسٹس شاہد کریم نے وقاراے شیخ اورشیراز ذکا کی درخواستوں پر فیصلہ سنادیا۔عدالت کی جانب سے اوپن کورٹ میں محفوظ کیا گیا فیصلہ سنایا گیا۔

لاہورہائیکورٹ نے فیصلہ سناتے ہوئے بتایا کہ ریور راوی پراجیکٹ کے لیے قواعد و ضوابط پورے نہیں کیے گئے اور روڈا ایکٹ کی دفعہ چار آئین سے متصادم قرار دی گئی ہے۔

فیصلے میں بتایا گیا کہ ماسٹر پلان مقامی حکومت کے تعاون کے بغیر بنایا گیا اور زرعی اراضی قانونی طور پر پر ہی ایکوائر کی جاسکتی ہے۔

عدالتی فیصلے کےمطابق 1894 کےقانون کی خلاف ورزی کرکے زمین ایکوائر کی گئی اس لئے روڈا ایکٹ کی دفعہ چار کا نوٹیفکیشن غیرقانونی ہے۔

عدالت نے ریور راوی پراجیکٹ کے لیے1 لاکھ7ہزار ایکڑ زرعی اراضی ایکوائر کرنے کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دے دیا۔

یہ بھی کہا گیا ہے کہ کلکٹر زمین ایکوائر کرنے میں قانون پرعمل کرنے میں ناکام رہے اور روڈا ایکٹ اتھارٹی پنجاب حکومت سے لیا گیا 5 ارب روپے کا قرضہ واپس کرے۔

ڈیڑھ سال قبل لاہور ہائیکورٹ نے محکمہ ماحولیات کی جانب سے ماحولیاتی رپورٹ عدالت میں جمع کرائے جانے تک حکام کو راوی ریور اربن پراجیکٹ پر تعمیرات سے روک دیا تھا۔

عدالت کا کہنا تھا کہ محکمہ تحفظ ماحولیات سمیت دیگر متعلقہ اداروں کی جانب سے مکمل جائزے اور منظوری کے بعد راوی ریور اربن پراجیکٹ پر کام شروع کیا جائے گا۔

وزیراعظم عمران خان نے 4 دسمبر2020 کو بتایا تھا کہ منصوبے پر فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن (ایف ڈبلیو او) اور نیشنل لاجسٹک سیل (این ایل سی) کی جانب سے کام شروع کیا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے 18 دسمبر 2020کو صوبائی کابینہ کے اجلاس کے دوران منصوبے کیلئے 5 ارب روپے کے قرض کی منظوری دی تھی اور یہ رقم زمین کی خریداری پر صرف ہونا تھی۔

پچیس مارچ 2021 کو لاہور ہائی کورٹ نے راوی ریور اربن پراجیکٹ پر جاری حکم امتناعی میں توسیع کردی تھی۔ عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا تھا کہ ماحولیاتی اثرات کا جائزہ لینے کےلیے خود مختار ادارے سے کروانے کا حکم دیا ہے۔

تازہ ترین

خانپور ڈیم میں کشتی الٹ گئی، استاد جاں بحق
بھارت کا یوم جمہوریہ، کشمیری کل یوم سیاہ منائیں گے
لاہورہائیکورٹ نےریور راوی پراجیکٹ غیرقانونی قراردیدیا
شرح سود9.75فیصدپربرقرار،اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کارجحان