لگتا ہے جیل صرف عام لوگوں کیلئے ہے،شہریارآفریدی

چیئرمین کشمیر کمیٹی شہریارآفریدی نے شہبازشریف کے لندن جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا  ہے کہ عام آدمی کو پیغام دیا جارہا ہے کہ جیل صرف تمہارے لیے ہے جبکہ بڑے لوگ اس گرفت سے مستثنیٰ ہیں۔

سماء کے پروگرام سوال میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ عدالتوں کا احترام ہم پر فرض ہے اور عدالتی فیصلوں پر من وعن عملدرآمد کیا جائے گا مگر ن لیگ کو قانونی لوازمات پورے کرنے ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ ایسی بھی کیا جلدی تھی کہ شہبازشریف کو کل ہی لندن جانا تھا، شہباز شریف تو نوازشریف کے ضمانتی بھی تھے تو وہ نوازشریف کو کب واپس لارہے ہیں۔

شہریارآفریدی کا کہنا تھا کہ نوازشریف بھی صرف 2 مہینے کےلیے باہر جانا چاہتے تھے لیکن ابھی تک واپس نہیں آئے۔

رانا ثناءاللہ کے خلاف منشیات کیس سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ رانا ثناءاللہ کیس میں لاہور ہائی کورٹ کے اسٹے آرڈر کے پیچھے چھپے ہوئے ہیں۔

شہریارآفریدی نے دعویٰ کیا کہ مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں شہبازشریف کے اثاثوں میں 412 فیصد اضافہ ہوا،ان لوگوں نے فالودے اور ریڑھی والے کے ناموں پر جائیدادیں خریدی ہیں۔

پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے رہنما ن لیگ عطاء تارڑ کا کہنا تھا کہ لاہور ہائی کورٹ نے شہبازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالا تھا فیصلے کے وقت ایف آئی اے حکام عدالت میں موجود تھے جبکہ ان کا یہ کہنا کہ انہیں آرڈر نہیں ملا غلط بیانی ہے۔

رہنما ن لیگ کا کہنا تھا کہ حکومت نے یہ طے کرلیا ہے کہ عدالتی فیصلوں  کو نہیں ماننا اس لیے مختلف حیلے بہانے کر رہے ہیں۔

عطاء تارڑ کا کہنا تھا کہ حکومتی اقدام توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے اور ہم اس معاملے پر توہین عدالت کی درخواست دیں گے۔

ایف آئی اے آفس میں ہلڑبازی کے الزام پر عطاء تارڑ کا کہنا تھا کہ فوٹیج موجود ہیں ایف آئی اے کے تمام الزامات جھوٹ پر مبنی ہے۔

عطاءتارڑ نے الزام لگایا کہ ایف آئی اے جھوٹا ادارہ ہے اور میں حیران ہوں کہ  یہ تحقیقات کیسے کرتے ہیں کیوں کہ یہ ایسا ہی سے جیسے اے این ایف نے رانا ثناء پر منشیات کا جھوٹا الزام لگایا تھا۔

انہوں نے کہا کہ زلفی بخاری کا نام ڈیڑھ گھنٹے میں ای سی ایل سے نکال دیا گیا تھا یہ ایک نہیں دو پاکستان کی واضح مثال ہے۔

متعلقہ خبریں