محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کےاہم انکشافات

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب نے اپنی رپورٹ نے انکشاف کیا ہے کہ لاہور میں ٹریفک کنٹرول نہ کیا گیا تو حدرفتار 25 کلومیٹر رہ جائے گی۔

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب ٹرانسپورٹ نے ٹريفک کی بہتری کيلئے 10سالہ پلان حکومت کو دے ديا ہے جس میں ٹرانسپورٹ، ٹریفک مینجمنٹ اور سڑکوں کی توسیع کيلئے 7 کھرب 78 ارب روپے مانگے ہیں۔

محکمہ ٹرانسپورٹ پنجاب کی رپورٹ میں کہا ہے کہ لاہور کے 17 پبلک روٹس پر صرف 220 بسيں ہیں جبکہ آٹو اور چنگچی رکشے ٹريفک کی روانی متاثر کرنے کی بڑی وجہ ہیں، شہر میں فوری طور پر 1ہزار 575 بسوں کی ضرورت ہے۔

کاروبار اور ٹرانسپورٹ سمیت کئی شعبوں میں پابندیوں میں نرمی

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ فنڈز ملیں تو لاہور میں 10سال ميں ٹریفک نظام کو بہتر بنایا جاسکتا ہے جبکہ ان فنڈز سے سڑکوں پر فٹ پاتھ 10 فٹ تک چوڑے کیے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں