مریدعباس قتل کیس، ملزم عاطف زمان نے درخواست ضمانت دائر کردی

Mureed-Abbas

کراچی سینٹرل جیل میں ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں اینکرمرید عباس قتل کیس میں نیا موڑ آگیا ہے۔

قتل کیس کا مرکزی ملزم عاطف زمان جرم سے منحرف ہوگیا ہے۔ ملزم نے تاخیری حربے کے بعد  تاخیر کو جواز بنا کر درخواست ضمانت دائر کردی ہے۔ عاطف زمان کی درخواست پر مدعیہ اور مرید عباس کی اہلیہ زارا عباس کے وکیل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے عدالت نے فریقین سے 16 جولائی کو جواب طلب کرلیا ہے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ عاطف زمان بے گناہ ہے اور ملزم نے کوئی جرم نہیں کیا۔ پولیس نے مرید عباس قتل کیس کا ایک روز تاخیر سے مقدمہ درج کیا اور تاخیر سے مقدمے کا اندارج شکوک وشبہات پیدا کرتا ہے۔

عاطف زمان نے درخواست دائر کی کہ 10 جولائی 2019 سے کیس میں اب تک کوئی پیش رفت نہیں ہوئی اور ٹرائل مکمل ہونےتک عاطف زمان کو ضمانت پر رہا کیا جائے۔ ملزم عاطف زمان ایک محنتی اور ایماندار شہری ہے اور پولیس نے عاطف زمان کو بدنیتی کی بنیاد پرجھوٹے مقدمے میں ملوث کیا۔

درخواست گزار نے یہ بھی موقف اختیار کیا ہے کہ پولیس حکام اور دیگر افراد نے ذاتی دشمنی کی وجہ سے عاطف زمان کو قتل کے مقدمے میں ملوث کیا۔

واضح رہے کہ ملزم عاطف زمان نے9 جولائی 2019کو فائرنگ کرکے ٹی وی اينکرمريدعباس اوراُن کےدوست خضر حيات کورقم کے تنازع پر گولياں مار کرکراچی کے علاقے ڈیفنس میں قتل کرديا تھا۔ مقتولين کےعلاوہ اوربھی کئی لوگوں نےعاطف کو منافع کيلئے رقم دے رکھی تھی۔

متعلقہ خبریں