مسلسل 10 دن تک دائرے میں گھومنے والی چینی بھیڑوں کا راز کیا ہے؟

بعض خبروں میں یہ دعویٰ بھی کیا گیا تھا کہ یہ بھیڑیں گھڑی وار حرکت کرتی رہی ہیں (فوٹو: سکرین گریب)

گذشتہ کئی دنوں سے چین کی ایک ویڈیو زیرِبحث ہے جس میں سینکڑوں بھیڑوں کو ایک دائرے میں مسلسل چلتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔
شمالی چین کے علاقے منگولیا میں موجود ان بھیڑوں کی مخصوص چال کی وجہ کیا ہے؟ اس بارے میں مختلف طرح کی آراء سامنے آ رہی ہیں۔
مزید پڑھیں
جریدے ’سبق‘ نے انگلینڈ کی یونیورسٹی آف ہارٹپوری کے شعبہ زراعت کے پروفیسر میٹ بل کی جانب سے پیش کی گئی ایک توجیہہ رپورٹ کی ہے۔
برطانوی پروفیسر کا کہنا ہے کہ ’شاید بہت طویل دورانیے کے لیے ان بھیڑوں کو فارم کے اندر رہنا پڑا ہو اس لیے وہ اس قسم کی (سٹیریوٹیپیکل) حرکت پر مجبور ہوئیں۔ وہ محدود احاطے میں بند ہونے کی وجہ سے دائروی حرکت کرنے لگیں۔‘
انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ بھیڑ چونکہ ریوڑ کی شکل میں رہنے والا جانور ہے اور یہ وہی کرتی ہے جو ریوڑ کی دوسری بھیڑیں کرتی ہیں۔
’روس ٹوڈے‘ نے مرک ویٹنری مینوئل کے حوالے سے لکھا کہ ’بھیڑوں کے ہاں ہرڈ مینٹیلیٹی یعنی گروپ یا ریوڑ والی نفسیات پائی جاتی ہیں اور ان کی نقل و حرکت اسی حساب سے ہوتی ہے۔‘
بھیڑیں درندوں  اور دیگر خطرات سے نمٹنے کے لیے مجموعے کی صورت میں حرکت کرتی ہیں۔
خیال رہے کہ چین میں موجود ان بھیڑوں کے بارے میں رپورٹ ہوا تھا کہ یہ چار نومبر سے مسلسل ایک دائرے میں حرکت کر رہی ہیں۔
ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ آیا اس دورانیے میں یہ بھیڑیں کھانے پینے کے لیے رکی ہیں یا نہیں۔
دوسری جانب بعض خبروں میں یہ دعویٰ بھی کیا گیا تھا کہ یہ بھیڑیں گھڑی وار حرکت کرتی رہی ہیں۔