معروف سینیر صحافی عارف نظامی انتقال کرگئے

پاکستان کے صحافی اور سابق نگراں وفاقی وزیر عارف نظامی لاہور میں انتقال کرگئے۔

عارف نظامی گزشتہ دو ہفتوں سے لاہور کے مقامی اسپتال میں زیر علاج تھے جہاں وہ آج  بروز بدھ 21 جولائی کو انتقال کرگئے۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کی جانب سے مائیکرو بلاگنگ سائٹ پر عارف نظامی کے انتقال کی تصدیق کی گئی۔ بھانجے بابر نظامی کے مطابق عارف نظامی عارضہ قلب میں مبتلا تھے۔

واضح رہے کہ عارف نظامی انگریزی اخبار پاکستان ٹوڈے کے بانی و ایڈیٹر اور نوائے وقت اخبار گروپ کے بانی حمید نظامی کے بیٹے تھے۔

سال 2010 میں عارف نظامی نے انگریزی اخبار ‘دی نیشن’ کو خیر باد کہہ کر ‘پاکستان ٹو ڈے’ کی بنیاد رکھی تھی۔

وہ نگراں وفاقی وزیر کے عہدے پر بھی تعینات رہے۔ انہیں سال 2013 میں نگراں وفاقی وزیر برائے اطلاعات و  پوسٹل سروسز بنایا گیا تھا۔

سال 2015 میں وہ نجی ٹی وی چینل ‘چینل 24’ کے سی ای او بنے جہاں سے پروگرام کی میزبانی بھی کیا کرتے تھے۔

عارف نظامی کی وفات پر وزیراعظم عمران خان سمیت دیگر سیاسی شخصیات نے بھی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ ٹوئٹر پر جاری بیان میں شیخ رشید نے کہا کہ نوائے وقت گروپ کے نظامی خاندان سے پانچ دہائیوں سے ایک ذاتی تعلق ہے، عارف نظامی صاحب کی رحلت میرے لئے کسی بھی ذاتی نقصان سے کم نہیں، اللہ تعالیٰ مرحوم کو غریق رحمت کرے، ان کے لواحقین کو صبر جمیل عطا کرے۔

سندھ حکومت کے ترجمان مرتضی وہاب نے بھی ٹویٹر پیغام میں عارف نظامی کی وفات پر شدید رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ ترجمان نے مرحوم کی صحافت کیلئے خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے بلندی درجات کی دعا کی۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ عارج نظامی پاکستان میں اخبارات کے مدیروں کی تنظیم سی پی این ای کے منتخب صدر بھی تھے۔ وہ ایک ایسے خاندان میں پیدا ہوئے جہاں صحافت ہی اوڑھنا بچھونا تھی۔

متعلقہ خبریں