مقبوضہ کشمیر کھلی جیل میں تبدیل ہوچکا ہے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں مودی سرکار نے 8 لاکھ فوج کے ساتھ علاقے کو جیل میں تبدیل کردیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے امریکی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ مودی حکومت کے دور میں بھارت میں مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتیں تشدد کا سامنا کررہی ہیں، بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں 8 لاکھ فوجیوں کے ساتھ وادی کو جیل میں تبدیل کردیا ہے جبکہ عالمی سطح پر مغربی ممالک اسے نظر انداز کررہے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ امریکا کی افغان میں سب سے زیادہ نقصان پاکستان کو ہوا پاکستان کے 70 ہزار سے زائد شہری شہید ہوئے جبکہ اس وقت 30 لاکھ افغان مہاجرین کی میزبانی بھی پاکستان ہی کررہا ہے۔ امریکا کو افغانستان سے انخلا سے قبل سیاسی مفاہمت کرانی چاہیے۔

پاکستان امریکا کو کوئی اڈہ فراہم نہیں کرےگا، وزیراعظم

انہوں نے کہا کہ بھارت اور پاکستان کےمابین تین جنگیں ہوئیں، جب سے جوہری قوت بنے ہیں بھارت سے جنگ نہیں ہوئی۔ جوہری ہتھیاروں کے خلاف ہوں، پاکستان کا جوہری پروگرام صرف ملک کے دفاع کیلئے ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے مزید کہا کہ چین نے ہر مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا۔ چین نے معاشی طور پر مستحکم کرنے کےلئے پاکستان کی مدد کی۔

عمران خان نے کہا کہ کرونا پر قابو پانے میں اللہ تعالیٰ نےمدد کی، ہم نے سب سے پہلے مکمل لاک ڈاؤن کیا۔ پاکستان میں غریب لوگ ہیں، مکمل لاک ڈاؤن نہیں لگاسکتے۔ اسی لیےمختلف جگہوں پر اسمارٹ لاک ڈاون نافذ کیا تاکہ لوگ متاثر نہ ہوں۔

متعلقہ خبریں